گجرات ہائی کورٹ آسارام ریپ کیس کی سماعت میں کیوں تاخیر کررہی ہے : سپریم کورٹ

نئی دہلی:ریپ معاملہ میں بابا گورمیت رام رحیم سنگھ کو دس سال قید کی سزا ملنے کے بعد عدلیہ نے اب جنسی استحصال میں سلاخوں کے پیچھے زندگی گذار رہے ایک اور سادھو سنت آسا رام باپوکے معاملہ میں بھی کڑا رخ اختیا ر کر لیا ۔سپریم کورٹ نے جیل میں بند پر آسارام کے خلاف آبروریزی کے معاملے کی سماعت میں تاخیر پر گجرات حکومت کو آج سخت پھٹکار لگائی۔ عدالت عظمیٰ نے گجرات حکومت کے وکیل سے پوچھا کہ آبروریزی کے متاثرہ سے پوچھ گچھ آج تک کیوں نہیں کی گئی؟
کورٹ نے ریاستی حکومت کے وکیل سے اس تناظر میں ایک حلف نامہ دائر کرنے کو کہا تھا۔ اس سے پہلے اپریل میں اس وقت کے چیف جسٹس جے ایس کیہر، جسٹس ڈی وائی چندرچوڑ اور جسٹس سنجے کشن کول کی بنچ نے نچلی عدالت کو ہدایت دی تھی کہ وہ اس معاملے میں سماعت میں تیزی لائے۔ بنچ نے تب کہا تھا نچلی عدالت کو ہدایت دی جاتی ہے کہ وہ گواہوں سے پوچھ گچھ کاکام جلد از جلد کرے۔ جودھپور پولیس نے آسا رام کو تین اگست 2013 کو گرفتار کیا تھا اور اس وقت سے وہ جیل میں بند ہیں۔ سورت کی ایک خاتون نے الزام لگایا تھا کہ آسارام نے 1997 سے لے کر 2006 تک اس کی آبروریزی کی تھی۔ اس دوران وہ احمد آباد شہر واقع آشرم میں رہ رہی تھی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Sc questions gujarat over slow trial in rape case against asaram bapu in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply