سپریم کورٹ نے آدھار معاملہ عدالت عظمیٰ میں لانے پر ممتا حکومت کو لتاڑا

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے آدھار کارڈ کو مختلف فلاحی اسکیموں بشمول موبائیل فون سے اسے جوڑنے کے خلاف ممتا بنرجی کی قیادت والی مغربی بنگال حکومت کو بری طرح لتاڑ لگائی۔سپریم کورٹ نے یہ بھی کہا کہ ممتا بنرجی عدالت عظمیٰ میںیہ معاملہ انفرادی طور پر پیش کر کے پارلیمانی فیصلہ کو چیلنج کر سکتی ہیں لیکن ایک ریاستی حکومت کے نمائندے کے طور پر وہ یہ معاملہ عدالت عظمیٰ میں نہیں لا سکتیں۔
ممتا بنرجی قیاد ت والی مغربی بنگال حکومت کی پیروی کرتے ہوئے سینیئر وکیل کپل سبل نے عدالت میں دلیل پیش کی کہ یہ پٹیشن ریاست کے محکمہ محنت کے ذریعہ داخل کی گئی ہے کیونکہ ان فلاحی اسکیموں کے تحت ان لوگوں کو سب سڈیز دینا ہیں۔بنچ نے کہا کہ ہم آپ سے متفق ہیںہے کہ حکومت نے اسے کیوں چیلنج کیا۔ہم جانتے ہیںکہ یہ ایسا معاملہ ہے جو پر غور وخوض کرنے کی ضرور ت ہے۔
لیکن یہ بات بھی اپنی جگہ درست ہے کہ مرکزی حکومت کے کسی فیصلہ کو ریاستی حکومت نہیں کوئی فرد ہی چیلنج کر سکتا ہے۔لہٰذا ممتا بنرجی کو انفرادی طور یہ پٹیشن دائر کرنی چاہیے اور اگر وہ فرد کے طور پر شکایت کرتی ہیں تو عدالت عظمیٰ اس پر ضرور سماعت کرے گی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Sc pulls up west bengal govt to moving sc on aadhaar linking in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply