آسام میں این آر سی کے مسودہ سے حذف کردہ10فیصد لوگوں کی دوبارہ توثیق کی جائے: سپریم کورٹ

نئی دہلی:سپریم کورٹ نے حال ہی میں آسام میں شائع نیشنل رجسٹر آف سٹیزنز (این آر سی)کے مسودے سے جو 10فیصد لوگ نکالے گئے ہیں ان کی دوبارہ تصدیق کرنے کا حکم دیا ہے۔

جسٹس رنجن گوگوئی اور آر ایف نریمان پر مشتمل بنچ نے این آر سی کے لیے دعووں اور اعتراضات کی سماعت کی حتمی تاریخ30اگست میں5ستمبر تک توسیع کر دی۔

سپریم کورٹ نے مرکز کی اس تجویز پر شکوک و شبہات ظاہر کرتے ہوئے سوال اٹھائے ہیں کہ اس سے 40لاکھ دعویداروں کو اپنا نام فہرست میں شامل کرانے کے لیے اپنے شجرہ /موروثی دستاویزات بدلنے کا موقع ملے گا۔ این آر سی کا دوسرامسودہ 30جولائی کو شائع ہوا تھا جس میںتین کروڑ29لاکھ میں سے2کروڑ 89لاکھ لوگوں کے نام شامل کیے گئے۔

اس فہرست میں40لاکھ70ہزار707افراد کے نام شائع نہیں کیے گئے۔ان میں سے37لاکھ58ہزار630 افراد کے نام خارج کر دیے گئے اور باقی2لاکھ 48ہزار 77کا فیصلہ ہونا باقی ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Sc orders re verification of 10 per cent of people excluded from assams draft nrc in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply