ممبئی دھماکوں کے مجرم ابو سلیم کو سپر یم کورٹ سے کوئی راحت نہ ملی

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے 1993میں ممبئی میںتسلسل سے ہوئے بم دھماکے معاملہ میں مجرم قرارد یے گئے ابو سلیم سے کوئی بھی رعایت برتنے سے انکار کر دیا ۔ سپریم کورٹ نے سلیم پر ٹاڈا اور قتل کا مقدمہ ہٹانے کی رٹ پٹیشن کو لاحاصل قرار دیتے سے انکار کر تے ہوئے کہا کہ وہ یہ تمام معاملات 2002کے دہلی بھتہ خوری معاملہ کی سماعت کے دوران اٹھا سکتا ہے ۔
سلیم کا کہنا تھا کہ اس پر ٹاڈا و قتل کیس نہیں چل سکتا کیونکہ یہ حوالگی معاہدے کی خلاف ورزی ہے۔یاد رہے کہ ابوسلیم کو 2017میں عمر قیدکی سزا سنائی گئی تھی۔ پرتگال کے ساتھ کیے گئے معاہدے کیرو سے ابو سلیم کو سزائے موت یا25سال سے زیادہ کی سزا نہیں دی جا سکتی۔
سلیم کا اصرار ہے کہ اسے عمر قید کی سزا سنائی گئی ہے جو درست نہیں ہے۔اپنی رٹ پٹیشن میں سلیم نے کہا تھا کہ مرکز کو ہدایت کی جائے کہ وہ اسے پرتگال واپس بھیج دے کیونکہ اس کی حوالگی کے وقت کیے گئے معاہدے کی خلاف ورزی کی جارہی ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Sc holds abu salems writ petition infructuous in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply