چار ماہ سے زائد کا حمل ساقط کرانے پر پابندی کے خلاف درخواست کی فوری سماعت سے سپریم کورٹ انکار

نئی دہلی:سپریم کورٹ نے 20 ہفتے سے زیادہ کے حمل کو ضائع کرنے سے روکنے والے قانون کی آئینی قانونی حیثیت کو چیلنج کرنے والی درخواست کی فوری سماعت سے یہ کہتے ہوئے انکار کر دیا کہ اس کے پاس سماعت کے لئے اس سے بھی اہم کئی مقدمات ہیں۔ آج کی پٹیشن عدالت کے گذشتہ پیر کے اس حکم کے نقطہ نظر میں دائر کی گئی ہے، جس میں اس نے مہاراشٹر کی ایک حاملہ خاتون کو ڈاؤن سنڈروم میں مبتلا 26 ہفتے کے حمل کو ختم کرنے کی اجازت نہیں دی تھی۔
چیف جسٹس جے ایس کیہر کی صدارت والی بنچ نے کہا کہ وہ متعلقہ پٹیشن کی سماعت گرمی کی چھٹیوں کے بعد ہی کر سکے گی، تب تک یا تو مذکورہ خاتون بچے کو جنم دے چکی ہوگی یا دینے ہی والی ہوگی۔ جسٹس کیہر نے کہا، ’قومی اہمیت کے کئی مسائل ہیں، جن کی سماعت کی جانی ہے۔ایسی صورت میں اسقاط حمل قانون کے خلاف دائر درخواست کی سماعت فی الحال ممکن نہیں ہے۔اس معاملے کی سماعت گرمیوں کی چھٹیوں کے بعد ہو سکتی ہے۔‘ عدالت عظمیٰ نے گزشتہ پیر کو مذکورہ خاتون کے حمل کو ضائع کرنے سے انکار کر دیا تھا کیونکہ میڈیکل بورڈ نے کہا تھا کہ ڈاؤن سنڈروم سے بچے کی جان کو کوئی خطرہ نہیں ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Sc declines urgent hearing to petition challenging validity of abortion in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply