قومی راجدھانی خطہ میں پٹاخوں کی فروخت پر پابندی سے کروڑوں کا کاروبار متاثرہوگا

الور:(یو این آئی)سپریم کورٹ کے قومی راجدھانی خطہ(این سی آر)علاقہ میں پٹاخوں کی فروخت پر پابندی لگا دیئے جانے کے حکم کے بعد این سی آر میں شامل ضلع الور میں بھی تقریباً 10کروڑ کا کاروبار متاثر ہونے کا امکان ہے۔ دیوالی پرصرف الور میں تقریباً 10کروڑروپے کے پٹاخوں کا کاروبار متاثر ہوگا۔
عدالت کے احکامات کے عملدرآمد میں یکم نومبر تک پٹاخوں کی فروخت پر پوری طرح پابندی ہوگی۔حالانکہ سپریم کورٹ کے حکم کے مطابق پٹاخوں کی فروخت پرروک ہے تاہم ، پٹاخے چلانے پر پابندی نہیں ہے۔ الور میں پٹاخوں کے پرانے ہول سیل ڈیلرز کروڑوں روپے کی آتش بازی کا سامان اسٹاک کئے ہوئے ہیں اور ضلع انتظامیہ نے دیوالی پر پٹاخوں کی فروخت کے لئےلائسنس جارے کرنے کیلئے درخواستیں طلب کی ہیں۔
ضلع انتظامیہ کی جانب سے جاری کئے گئے لائسنس کیلئے تقریباً 200سے زیادہ درخواستیں ملی ہیں۔ان میں ضلع انتظامیہ نے الور شہر میں 39دکانیں،راج گڑھ میں13 اور ایک دکان گووند گڑھ میں کھولنے کیلئے درخواستیں طلب کی تھیں۔ا س کیلئے13اکتوبر کو لائسنس کی لاٹری نکالی جانی تھی لیکن اب عدالت کے حکم کے بعد اس عمل پر بحرا ن کے بادل منڈلانے لگے ہیں۔
پولیوشن کنٹرو ل کی جانب سے الور شہر میں پانچ میں سے چار مقامات پر فضائی اور صوتی آلودگی کی جانچ کی جاتی ہے۔عدالت کے حکم کے بعد اس بار خصوصی نگرانی رکھی جائے گی۔ضلع انتظامیہ کا بھی کہنا ہے کہ سپریم کورٹ کے احکامات پر عملدرآمد کرایاجائے گا اور احکامات کے نقول ملنے کے بعد اس پر غور خوض کیا جائے گا۔
اس کے بعد ہی اس سلسلہ میں کچھ کہا جاسکتا ہے۔ پٹاخوں کے تاجروں نے بتایا کہ تقریباسبھی تاجر وں نے آڈر بک کرادیئے ہیں لیکن ابھی مال اٹھانا باقی ہے۔سپریم کورٹ کے حکم سے ان پر بحران کے حالات پیدا ہوسکتے ہیں۔دیولی پر پٹاخوں کے کاروبار سے تقریباً 3000لوگوں کا روزگار بھی متاثر ہوگا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Sc ban on firecrackers industry stares at rs 1000 crore loss layoffs in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply