سپریم کورٹ نے بوفورس مقدمہ میں فریق بننے کی کوشش کرنے والے اجے اگروال کی حیثیت معلوم کی

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے بوفورس کیس میںاپیل دائر کرنے والے اجے اگروال کے حق مداخلت کی بابت معلوم کیا۔عدالت نے یہ بھی کہا کہ کسی تیسرے شخص کو جس کا کیس سے کوئی تعلق نہ ہو فریق بنانا اصول فوجداری قوانین کے منافی ہے۔
تاہم سپریم کورٹ نے کہا کہ وہ اس معاملہ کی سماعت 2فروری کو کرے گی۔اگروال نے ، جو بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے لیڈر بھی ہیں، 64کروڑ روپے کے بوفورس رشوت مقدمہ کی جلد سماعت کے لیے عدالت عظمیٰ میں ایک اپیل دائر کی تھی۔
انہوں نے دہلی ہائیکورٹ کے 2005کے اس فیصلہ کو بھی چیلنج کیا جس میں یورپ مقیم ہندوجا برداران کے خلاف تمام الزامات باطل کر دیے تھے۔
بوفورس اسکینڈل ہووئزر توپوں کی خریداری میں رشوت دینے سے متعلق وہ کیس ہے جس نے1990کے اوائل میں راجیو گاندھی حکومت کو اقتدار سے بے دخل کر دیا تھا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Sc asks petitioners locus in bofors case in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply