سعودی عرب نے ہندوستانی عازمین حج کا تخفیف شدہ کوٹہ بحال کر دیا: نقوی کی کوششوں کا ثمرہ

نئی دہلی: وزارت اقلیتی امور کی کوششوں کو آج اس وقت ایک زبردست کامیابی ملی جب سعودی حکام نے ہندوستانی عازمین حج کا تخفیف شدہ 20 فیصد کوٹہ بحال کردیا، جو سعادت حج سے محروم رہ جانے والے عازمین کی بڑی تعداد کے لئے ایک بڑی خوشخبری ہے۔ مرکزی وزیر ملکت برائے اقلیتی امور (آزادانہ چارج) مختار عباس نقوی کی سعودی حکام اور ہندوستان میں تعینات سعودی سفیر سے مسلسل بات چیت اور کوششوں کے نتیجہ میں سفر حج پر جانے کا ارادہ رکھنے والے ہندوستانیوں کو یہ بڑا تحفہ ملا ہے۔
باوثوق ذرائع نے بتایا کہ سعودی حکومت میں نائب وزیر اعظم اور سعودی سپریم حج کمیٹی کے چیئر مین شہزادہ محمد نائف نے حکومت ہند کی مسلسل جدوجہد کے نتیجے میں یہ فیصلہ کیا ہے۔ مسٹر مختار عباس نقوی نے ہندوستانی مسلمانوں کے مطالبے پر اپنی لگاتار کوششوں کے ذریعے یہ کامیابی حاصل کی ہے۔خیال رہے کہ حرمین شریفین کی بڑے پیمانے پر توسیع کے لئے جاری تعمیراتی سرگرمیوں کی وجہ سے سعودی حکومت نے سال 2013 میں ساری دنیا کے عازمین کے کوٹے میں تخفیف کردی تھی، جس کی وجہ سے ہندوستانی عازمین حج کے کوٹہ میں اسی وقت سے 20 فیصد کی تخفیف کا سلسلہ جاری تھا، جس کے سبب سفر حج پر جانے والے ہندوستانی مسلمانوں کی بڑی تعداد سعادت حج سے محروم ہوجاتی تھی۔
سعودی حکومت کی طرف سے ہندوستانی عازمین کی تعداد میں تخفیف کی وجہ سے گذشتہ برس تقریبا ً ایک لاکھ 36 ہزار ہندوستانی عازمین سفر حج پر گئے تھے جن میں سے تقریباً ایک لاکھ افراد حج کمیٹی آف انڈیا کے ذریعے جبکہ تقریباً 36 ہزار لوگ پرائیویٹ ٹور آپریٹر کے ذریعے سفر حج پر گئے تھے۔ واضح رہے کہ حج 2016 میں ملک بھر کے تقریباً چار لاکھ افراد نے سفر حج پر جانے کے لئے درخواستیں دی تھی لیکن اب کوٹے میں تخفیف کو ختم کردیئے جانے کے بعد حج 2017 میں ایک لاکھ 70 ہزار ہندوستانی عازمین کے سفر حج پر جانے کا راستہ صاف ہوگیا ہے۔ مسٹر نقوی نے وزارت اقلیتی امور کے آزادانہ چارج لینے کے بعد اقلیتوں کی بہبود کے لئے جو تیز رفتار اقدامات کئے ہیں، ان میں عازمین حج کے کوٹے میں اضافہ ان کی ایک بڑی کامیابی ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Saudi arabia revokes haj quota reductions in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply