پاکستان کو اپنا محاسبہ کرنا چاہئے کہ اس سے کہاں غلطی ہوئی ہے:نیپال

نئی دہلی:نیپال نے آج کہا کہ اب وقت آ گیا ہے کہ جنوبی ایشیائی علاقائی تعاون کانفرنس (سارک)کو اپنی تنظیم میں پاکستان کی شمولیت کے بارے میں غور کرنا ہوگا۔ ہندوستان میں نیپال کے سفیر متعین ہندوستان دیپ کمار اپادھیائے نے یہاں فارن کارسپنڈٹینس کلب میں ایک ڈائیلاگ کے دوران سارک اور پاکستان کے بارے میں ایک سوال کے جواب میں کہا کہ اب وقت آ گیا ہے کہ سارک، بی بی آئی این(بنگلہ دیش، بھوٹان، بھارت، نیپال )اور بمسٹیک کو کس طرح کارآمد بنایا جائے۔اس سلسلے میں غوروفکر کرتے ہوئے اس کا حل تلاش کیا جا نا چاہئے۔
پاکستان کو سارک سے خارج کئے جانے کے بارے میں پوچھے جانے پر مسٹر اپادھیائے نے کہا کہ اس بارے میں فیصلہ لینے کا وقت اب آ چکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کو خود کے بارے میں بھی سوچنا چاہیے کہ اس سے کیا غلطی ہوئی ہے۔ اگر اسے احساس ہو جائے کہ غلطی کیا ہے اور اسکی اصلاح کیلئے وہ تیار ہے تو کوئی مسئلہ نہیں ہے۔ اہم بات یہ ہے کہ اسے خود ہی اس کا احساس ہو۔ نیپال کے سفیر نے کہا کہ پاکستان کو دہشت گردی کے سلسلے میں بھی بہت واضح موقف اختیار کرنا ہوگا۔ کسی بھی قسم کی دہشت گردی صرف دہشت گردی ہوتی ہے اور اسے کسی بھی طرح سے جائز نہیں ٹھہرایا جا سکتا ہے۔
انہوں نے کہا کہ جمہوریت کا اپنا کردار ہوتا ہے اور اس میں اختلافات کو پرامن طریقے سے حل کیا جا سکتا ہے۔ تو پھر جمہوریت میں دہشت گردی کی کیا ضرورت ہے۔ لوگ اپنے خیالات کو دیگر ذرائع سے بھی اٹھا سکتے ہیں۔ تاہم انہوں نے یہ امید بھی ظاہر کی کہ جلد ہی چیزیں بہتر ہوں گی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Saarc should decide pakistan future in organsation nepal in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply