روہت ویمولہ کے والدین سے” مسلم لیگی وعدہ “2 سال بعد بھی پورا نہیں ہوا

حیدر آباد: جنوری2016میں خود کشی کرنے والے ایک دلت طالبعلم اور پی ایچ ڈی اسکالر روہت ویمولا کے والدین کو شکایت ہے کہ انڈین یونین مسلم لیگ نے، جس کا کہ ویمولہ رکن تھا،انہیں 20لاکھ روپے دینےکا جو وعدہ کیا تھا وہ دو سال گذرجانے کے باوجود ابھی تک پورا نہیں ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ نہ صرف انہیں یہ رقم نہیں ملی بلکہ اس کے ملنے کے کوئی آثار بھی نظر نہیں آرہے۔ مسلم لیگ نے صرف اپنے سیاسی فائدے کے لیے انہیں استعمال کیا ہے۔روہت کے خودکشی کرنے کے بعد انڈین یونین مسلم لیگ نے کرایے کے مکان میں رہائش پذیر ویمولہ کے والدین کو مکان بنانے کے لیے20لاکھ روپے دینے کا وعدہ کیا تھا۔

ویمولہ کی ماں رادھیکا نے کہا کہ ان کے بیٹے کے خود کشی کرجانے کے بعد کیرل سے انڈین یونین مسلم لیگ کے ارکان آئے اور اسے تسلی دلاسہ دیا اور کہا کہ انہیں یہ خبر سن رک بہت صدمہ ہوا اور انہیں یہ بھی علم ہوا کہ ویمولہ کا خاندان بہت غریب ہے ۔اس کے بعد پارٹی کے لوگ اسے کیرل لے گئے اور ایک بڑے مجمع میں اعلان کیا کہ ویمولہ کے والدین کو گھر بنانے کے لیے20لاکھ روپے دیے جائیں گے۔

لیکن یہ وعدہ آج تک پورا نہیں ہوا۔ جبکہ مسلم لیگ والوں نے وجے واڑہ اور گنٹور کے درمیان واقع کوپوراؤورو میں مکان کے لیے زمین بھی دیکھ لی تھی۔رادھیکا نے کہا کہ پارٹی نے انہیں جو دو چیک دیے تھے وہ باؤنس ہو گئے ۔جس کے لیے اسے بینک کے چکر کاٹنا پڑے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Rohit vemula suicide case muslim league made false promise in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply