اجودھیا تنازعہ کے تصفیہ کے لیے سپریم کورٹ کی تجویز کا راشٹریہ مسلم منچ نے خیر مقدم کیا

نئی دہلی: راشٹریہ مسلم منچ نے اجودھیا تنازعہ پر سپریم کورٹ کی سفارش کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ مسئلہ مذاکرات سے ہی حل ہو سکتا ہے اور فریقوں کو اس رخ پر پہل کرنی چاہئے۔ راشٹریہ مسلم منچ کے کنوینر افضال احمد نے عدالت عظمیٰ کی اس تجویز کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ یہ مسئلہ بات چیت سے حل ہو سکتا ہے اور دونوں فریقوں کو اس سمت میں پہل کرنی چاہئے۔
مسٹر احمد نے یو این آئی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں امن اور چین برقرار رکھنے کے لئے ہم سب تیار ہیں اور اتحاد اور سالمیت کے لئے ہم ہر ممکن کوشش کریں گے. انہوں نے کہا کہ معاشرے کو مل کر کام کرنا چاہئے اور جو جس کا حق ہے اسے ملنا چاہئے۔
واضح رہے کہ سپریم کورٹ نے آج بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے لیڈر سبرامنیم سوامی کی اس درخواست پر کہ معاملہ کی جلد سمات کی جائے، تبصرہ کرتے ہوئے تجویز پیش کی ہے کہ عدالت کے باہر اس معاملے کو بات چیت سے حل کرنے کی کوشش کی جانی چاہئے۔عدالت عظمیٰ نے یہ بھی کہا کہ ضرورت پڑنے پر وہ اس میں ثالثی کے لئے تیار ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Rashtriya muslim manch welcomes sc suggestion in ram mandir case in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply