ریپ اور قتل معاملہ میں سزائے موت پانے والے کو سپریم کورٹ نے کھلی عدالت میں موقف پیش کرنے کی اجازت دی

نئی دہلی:سپریم کورٹ نے چار سال کی بچی کی آبروریزی اور قتل کے معاملے میں موت کی سزا پانے والے ایک مجرم کو کھلی عدالت میں اپنا موقف رکھنے کی اجازت دے دی۔
مہاراشٹر کے وسنت سمپت دپارے کو 2008 میں بچی کے ساتھ عصمت دری اور قتل کا مجرم قرار دیتے ہوئے پھانسی کی سزا مقرر کی گئی تھی لیکن اس نے عدالت عظمی میں نظرثانی درخواست دائر کی ہے۔ جسٹس دیپک مشرا کی سربراہی والی تین رکنی بینچ نے نظرثانی درخواست کی سماعت کے دوران کہا ہم کھلی عدالت میں جرح کا آپ کو ایک موقع دیں گے لیکن آپ کی طرف قانونی دائرے میں ہونا چاہئے۔
عدالت عظمی نے اپنے ایک تاریخی فیصلے میں کہا تھا کہ موت کی سزا کے خلاف نظرثانی درخواست کی سماعت کھلی عدالت میں کی جائے گی اور درخواست گزار کو موقف رکھنے کے لئے نصف گھنٹے کا وقت دیا جائے گا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Rape murder of 4 yr old sc to examine plea of condemned man in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply