ریپ کے ملزم ممبر اسمبلی کی درخواست ضمانت سپریم کورٹ نے خارج کر دی

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے نابالغ کی عصمت دری کے ملزم راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) کے رکن اسمبلی راج بلبھ یادو کی پٹنہ ہائی کورٹ کی طرف سے گزشتہ ماہ منظور کی گئی ضمانت خارج کر دی ۔جسٹس اے کے سیکری اور جسٹس ابھے منوہر سپرے کی بنچ نے پٹنہ ہائی کورٹ کے اس فیصلے کو چیلنج کرنے والی بہار حکومت کی درخواست پر کل فیصلہ محفوظ رکھا تھا۔
واضح رہے کہ پٹنہ ہائی کورٹ نے ملزم راج بلبھ کو ضمانت دے دی تھی، جس کے خلاف ریاستی حکومت نے عدالت عظمیٰ میں اپیل کی تھی۔بہار حکومت نے عدالت سے درخواست کی تھی کہ اس معاملے میں جب تک گواہوں کے بیان پورے نہیں ہو جاتے، تب تک راج بلبھ کو جیل میں ہی رکھے جانے کا حکم دیا جائے۔ریاستی حکومت کی دلیل تھی کہ جیل سے باہر آنے کے بعد ملزم گواہوں کو متاثر کر سکتا ہے۔
اکتوبر میں اس کے ضمانت پر رہا ہوتے ہی متاثری لڑکی نے واٹس اپ کے توسط سے صحافیوں سے فریاد کی تھی کہ وہ کچھ کریں کیونکہ راج بلبھ جیل سے باہر آچکا ہے اور وہ نہیں جانتی کہ اس کے گھر والوں کے ساتھ اب وہ کیسا سلوک کرے گا۔ اس نے مزید لکھا تھا کہ اسے اب اپنی کوئی پروا نہیں ہے کیونکہ وہ تو اسی وقت مر چکی تھی جب اس کے ساتھ یہ حادثہ رونما ہوا تھا ۔
اور ویسے بھی اب اس کے پاس کھونے کے لیے کچھ نہیں ہے۔اسے اب فکر ہے تو صرف اپنے گھر والوں کی ہے۔واضح رہے کہ یادو جیل سے نکلتے ہی پٹنہ میں لالو یادو سے ان کی رہائش گاہ جا کر ملا تھا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Rape accused rjd mla raj ballabh yadav to remain in jail after sc cancels bail plea in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply