رام مندر کی تعمیر کا فیصلہ عدالت سے نہیں پارلیمنٹ کے ذریعہ کیا جائے: توگڑیا

پٹنہ: وشو ہندو پریشدنے نریندر مودی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ پارلیمنٹ میں قانون بناکر اجودھیا میں رام مندر کی تعمیر کا راستہ ہموار کرے۔
وی ایچ پی کے ایگزیکٹو صدر ڈاکٹر پروین توگڑیا نے یہاں پریس کانفرنس میں کہا کہ وی ایچ پی نے دو سال تک نریندر مودی حکومت کو کام کرنے کا موقع دیا اور اس دوران وہ کبھی بھی کچھ نہیں بولے لیکن اب وقت آ گیا ہے کہ مودی سرکار بھارتیہ جنتا پارٹی( بی جے پی) کی ہماچل پردیش کے پالمپور میں سال 1987 میں ہونےوالی قومی ورکنگ کمیٹی کی تجویز کی روشنی میں اجودھیا میں رام مندر کی تعمیر کے لئے پارلیمنٹ سے قانون پاس کرائے۔
ڈاکٹر توگڑیا نے کہا کہ 1987 میں بی جے پی کی قومی ورکنگ کمیٹی نے یہ تجویز منظور کی تھی کہ ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کے لئے پارلیمنٹ سے قانون بنایا جائے. انہوں نے کہا کہ مسٹر نریندر مودی قول کے پکے اور سچے ہیں۔وہ یقیناپارلیمنٹ میں اس سلسلے میں قانون بنا کر رام مندر کی تعمیر کا راستہ ہموار کریں گے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Ram temple construction only possible by legislation pravin togadia in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply