دلتوں کی سر عام پٹائی کے معاملہ کی سی بی آئی جانچ کا مطالبہ حکومت نے مسترد کر دیا

نئی دہلی:وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے گجرات کے اونا علاقے میں دلتوں کی سرعام بے رحمی سے پٹائی کے واقعہ کی مرکزی جانچ بیورو (سی بی آئی) سے تفتیش کرانے کا اپوزیشن کا مطالبہ مسترد کرتے ہوئے کہاکہ متاثرین کو چھ ماہ کے اندر انصاف مل جا ئے گا۔ مسٹر سنگھ نے راجیہ سبھا میں ضابطہ 176 کے تحت دلتوں پر مظالم پر ہوئی مختصر مدت بحث کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ گجرات کے واقعہ کی جتنی بھی مذمت کی جائے وہ کم ہے اور یہ انسانیت کے لئے ایک سیاہ دھبہ ہے۔
ایسا واقعہ دوبارہ نہیں ہونا چاہئے۔ اس واقعہ کی سی بی آئی جانچ کرائے جانے کے مطالبہ کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مرکزی تفتیشی ایجنسی کی معتبریت کے پیش نظر اس طرح کی مانگ کی جاتی ہے لیکن سی بی آئی کو ہر معاملے کی جانچ کرانے میں بہت زیادہ وقت لگتا ہے۔اس معاملے میں فوری کارروائی کرنے اور متاثرین کو چھ ماہ کے اندر اندر انصاف دلانے کے مقصد سے اسے سی آئی ڈی کو سونپا گیا ہے اور تیز رفتار کام کرنے والی عدالت قائم کرنے کے لئے کہا گیا ہے۔
انہوں نے کہا کہ سی آئی ڈی کو 60 دنوں کے اندر اندر چارج شیٹ دائر کرنے کے لئے کہا گیا ہےمسٹر راجناتھ نے بی جے پی کی حکمرانی والی ریاستوں میں دلتوں پر بڑھ رہے مظالم کے اپوزیشن کے الزام کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا کہ گجرات میں سال 2015 میں جرائم کے کل 979 کیس ہوئے ہیں جبکہ بہار میں 6367 اور اتر پردیش 8357 معاملے درج ہوئے ہیں۔
انہوں نے بی ایس پی لیڈر مایاوتی کو برا بھلا کہے جانے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ صرف جسمانی تشدد پر ہی نہیں بلکہ اپنی زبان سے کسی کو تکلیف پہنچانے پر بھی غور کرنا چاہئے اور نہ صرف ہندستان بلکہ دنیا کی کسی بھی عورت کے تئیں اس طرح کی زبان استعمال نہیں ہونا چاہئے۔
مسٹر سنگھ کے جواب دینے پر کانگریس کی کماری سیلجا نے اس واقعہ میں ملوث تمام 40 افراد کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا لیکن اس دوران وزیر داخلہ ایوان سے چلے گئے۔اس کے بعد ڈپٹی چیئرمین پی جے کورین نے خصوصی ذکر کے لئے نام پکارا، تو کانگریس اراکین ایوان سے واک آؤٹ کرکے چلے گئے۔ (یو این آئی)

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Rajnath singh rejects demand of cbi probe of una incident in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply