پاکستانیوں کے برتاؤ سے مجھے کوئی شکایت نہیں،مجھے جو کرنا چاہئے تھا وہ میں نے کیا: راجناتھ

نئی دہلی: وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے کہا کہ پاکستان کے دورے کے دوران وہاں ان کے ساتھ جو سلوک ہوا اس کی انہیں کوئی شکایت نہیں ہے۔ مسٹر سنگھ نے پاکستان میں سارک ممالک کے وزرائے داخلہ کے ساتویں اجلاس سے واپس آنے کے بعد آج راجیہ سبھا میں دیے گئے اپنے بیان پر ارکان کی جانب سے چاہی گئی وضاحت کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ ان کے ساتھ جو سلوک کیا گیا اس سلسلے میں ان کو جو کرنا تھا وہ کیا۔
اس کی انہیں کوئی شکایت نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ مہمان نوازی میں دنیا بھر میں ہندوستان کی اپنی ایک ساکھ ہے۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ سارک اجلاس کے دوران پاکستان میں وہاں کی میڈیا نے ان کی تقریر کو دانستہ نشر نہیں کیا اس کا جواب دینا ان کے لئے مشکل ہے۔ انہوں نے اتنا ضرور کہا کہ سارک کانفرنس کے براہ راست نشریات کے لئے دوردرشن کی ٹیم گئی تھی لیکن اسے اجلاس کی کارروائی کی کوریج کے لئے اندر نہیں جانے دیا گیا۔ اس کے علاوہ ایک ہندوستانی صحافی کو بھی رپورٹنگ کے لئے اندر جانے کی اجازت نہیں دی گئی۔
مسٹر سنگھ نے کہا کہ سارک اجلاس ختم ہونے پر میزبان پاکستان کے وزیر داخلہ نے تمام رکن ممالک کے رہنماؤں کو دوپہر کے کھانے کے لئے مدعو کیا اور خود گاڑی میں بیٹھ کر چلے گئے۔ انہوں نے کہا کہ ملک کی عزت اور وقار کو ذہن میں رکھتے ہوئے انہیں جو کرنا چاہیے تھا کیا۔ وہ وہاں کھانے نہیں گئے تھے۔ اس کی انہیں ناراضگی بھی نہیں ہے۔
مسٹر سنگھ نے کہا کہ پاکستان کے اس دورے کے دوران ہندوستان کے خلاف احتجاج ہوا اور جہاں وہ ٹھہرے ہوئے تھے وہاں سے کانفرنس کے پنڈال کے لئے ان بذریعہ کار جانا تھا لیکن سیکورٹی اہلکار انہیں ہیلی کاپٹر سے لے گئے۔ آخر میں انہوں نے کہا کہ پاکستان میں تقریر بلیک آؤٹ کی کیا روایت رہی ہے، اس کے بارے میں انہیں کوئی معلومات نہیں ہے اور اس سلسلے میں وزارت خارجہ معلومات حاصل کریں گے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Rajnath singh refuses to express his disappointment at the behaviour of the pakistani interior minister in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply