شمالی ہند گرمی سے اور مشرقی سیلاب سے بے حال،راجستھان میں پارہ51 ڈگری سیلشئیس

نئی دہلی: جہاں ایک طرف شمالی اور وسطی ہند شدید گرمی سے جھلس رہا ہے وہیں مشرقی ہند میں طوفانی بارشوں سے سیلاب نے اور جنوبی ہند میں روانو طوفان کی آمد سے زبردست بارشوں کے خطرے نے دو تہائی ہندوستان کو قدرتی عتاب کا شکار بنا رکھا ہے۔
راجستھان کے پلوڈھی شہر میں درجہ حرارت 51ڈگری سیلشئیس تک پہنچ گیا جبکہ گجرات کے شہر احمد آباد میں پارہ48ڈگری پار کر جانے سے 100سالہ ریکارڈ ٹوٹ گیا۔دہلی میں بھی، جو دھوپ کی تمازت سے پگھلتا محسوس ہو رہا ہے،درجہ حرارت 46ڈگری پار کرنے کے قریب ہے۔
دہلی میں گرمی کی شدت کااندازہ اس سے لگایا جا سکتا ہے کہ کم سے کم درجہ حرارت بھی 29ڈگری ہے۔راجستھان کا تو حال برا ہے۔ جہاں پلوڈھی میں لگاتار دوسرے روز درجہ حرارت51ڈگری سیلشئیس ریکارڈ کیا گیا۔
جبکہ چورو میں50.2، بیکانیر اور باڑمیر میں 49.5 ، گنگا نگر میں49.1، جیسلمیر میں49، کوٹا میں48.2اور جے پور میں 46.5،ہریانہ کے حصار میں46، چنڈی گڑھ میں 43.1اور پنجاب کے امرتسر میں43.8 اتر پردیش کے باندہ میں 47.2، الہٰ آباد میں 46.7، جھانسی میں46.4، اورئی میں46 اور لکھنو¿ میں 44.4ڈگری درجہ حرارت ریکارڈ کیا گیا۔
جہاں اسکولوں میں23مئی سے چھٹیوں کا اعلان کر دیا گیا۔شمالی ہند جس قدر گرمی سے تپ رہا ہے جنوبی ہند کا آندھرا پردیش اور تلنگانہ خطہ روانون طوفان کی زد میں ہے جو کسی بھی وقت طوفان بلا خیز کی شکل اختیار کر سکتا ہے۔ مشرقی ہند کا اڑیسہ صوبہ بھی اس طوفان کی زد میں ہے۔

Title: rajasthan sizzles 48 to 51 degree and ahmedabad breaks 100 year record | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply