بھارت بند کے دوران عوام کو پریشانی نہیں ہونی چاہئے:کولکاتا ہائی کورٹ

کولکاتا :مرکزی ورکرس ایسوسی ایشن کے 2ستمبر کو مجوزہ ملک گیر ہڑتال کے خلاف آل انڈیا مائناریٹی فارم کی جانب سے دائر مفاد عرضی پر کلکتہ ہائی کورٹ کے کارگزار چیف جسٹس گریش چندر گپتا اور جسٹس ارندم سنہا کی ڈویژن بنچ نے ہدایت دی ہے کہ بند کے دوران شہریوں کے ذاتی حقوق کا خیال رکھا جائے اور کسی بھی طرح کی بد امنی نہ ہو۔
مفاد عامہ کی عرضی کی پیروی کرنے والے ایڈوکیٹ و ترنمول کانگریس کے ممبر پارلیمنٹ ادر یس علی نے بتایا کہ عدالت نے بند کو غیر قانونی قرار دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ عدالت نے ریاستی حکومت کو ہدایت دی کہ بند کے دوران امن و امان کی فضا برقرار رہے اور لوگوں کے ذاتی حقوق کے تحفظ کو یقینی بنائیں۔ادریس علی نے عدالت میں کہا کہ ہڑتال کو کامیاب بنانے کیلئے تشدد اور زور و زبردستی سے کام لیا جاتا ہے اور اس کی وجہ سے اس بند کو غیر قانونی قرار دیا جائے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Public life sohuld not be disturbed during nation wide strike says kolkat high court in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply