وزیر زراعت رادھا رمن سنگھ نے خواتین کو مالی امداد مہیا کرنے کی اپیل

نئی دہلی: زراعت اور کسانوں کی بہبود کے وزیر رادھا موہن سنگھ نے کہا ہے کہ خواتین کو مالی امداد مہیا کرانے کی شدید ضرورت ہے تاکہ ملک میں خواتین کی امدادباہمی کے اداروں کو مستحکم کیا جا سکے۔ ملک میں خواتین اور امدادباہمی کے اداروں کی ترقی اور کامیابی کے بے پناہ امکانات ہیں۔ مسٹر رادھا موہن سنگھ نے مزید کہا ہے کہ اگر یہ تحریک جاری رہتی ہے، تو زیادہ سے زیادہ عورتوں کو خواتین کے امداد باہمی کے اداروں سے فائدہ حاصل ہوگا۔
مسٹر سنگھ نے آج نئی دلی میں نیشنل کوآپریٹیو ڈیولپمنٹ کارپوریشن(این سی ڈی سی) کے ذریعہ خواتین کی امدادباہمی کے اداروں کو مستحکم کرنے کے موضوع پر منعقد ہ قوی ورکشاپ میں یہ بات کہی۔ اس ورکشاپ میں ملک بھر میں واقع خواتین کے امداد باہمی کے اداروں سے منسلک تقریبا دو سو خواتین نے شرکت کی اور خواتین کے امداد باہمی کے اداروں سے متعلق مختلف اسکیموں کے بارے میں آپس میں تبادلہ خیال کیا۔ وزیرزراعت نے مزید کہا کہ ہندوستان میں 1.2بلین آبادی ہے، جس میں تقریبا 70فیصد آبادی ملک کے دیہی علاقوں میں سکونت پذیر ہے۔ فصلوں کی بوائی اور کٹائی سمیت کاشتکاری کے مختلف مرحلوں میں خواتین بے حد اہم کردار ادا کرتی ہیں۔
انہوں نے مزید کہا کہ ملک میں موجود کل 8لاکھ امدادباہمی کے اداروں میں سے تقریبا 20،014امدادباہمی کے اداروں کوخواتین کے ذریعہ چلایاجاتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ زراعت اور کسانوں کی بہبود کی وزارت اپنی تمام اسکیموں اور پروگراموں میں خواتین کی شراکت داری کو یقینی بناتی ہے اور 30فیصد فنڈز کو خواتین کے لئے مختص کرتی ہے۔ سال 14-2013سے ریاستوں اور قانون نافذ کرنے والی ایجنسیوں کو کہاگیا ہے کہ وہ خواتین کو بااختیار بنانے کے لئے موجودہ مرکزی امداد یافتہ/مرکزی سیکٹر کی اسکیموں کے تحت 10تا20فیصد رقم فنڈز خواتین کی ملکیت والے مویشیوں کیلئے استعمال کریں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Provide financial help to women to strengthen women cooperatives in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply