صدارتی الیکشن اصولوں و نظریہ کی جنگ ہے جسے متحد ہو کر لڑیں گے:سونیا گاندھی

نئی دہلی:کانگریس صدر سونیا گاندھی نے آج کہا کہ صدارتی انتخابات اپوزیشن کے لوگوں کے لئے اصولوں اور نظریہ کی لڑائی ہے اور وہ اس کو ساتھ مل کر لڑیں گے۔ محترمہ سونیا گاندھی نے اپوزیشن کی مشترکہ صدارتی امیدوار محترمہ میرا کمار کی طرف سے آج اپنا پرچہ نامزدگی بھرے جانے کے موقع پر کہا کہ ” ہمارے لیے یہ ایک نظریہ، اصول اور سچ کی جنگ ہے اور ہم اس کو ساتھ مل کر لڑیں گے”۔
کانگریس کے نائب صدر راہل گاندھی نے محترمہ میرا کمار کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ سماج کو بانٹنے والی سوچ کے برعکس وہ قومی وحدت کی اقدار کی علامت ہیں۔ بیرون ملک کے دورے پر مسٹر راہل گاندھی نے ٹویٹ کیا کہ تفریق والے نظریے کے برعکس وہ ان اصولوں کی نمائندگی کرتی ہیں جو ہمیں ایک قوم کے طور پر آپس میں متحد کرتے ہیں۔ ہمیں محترمہ میرا کمار کو اپنا امیدوار بنانے پر فخر ہے ۔
واضح رہے کہ 17 اپوزیشن جماعتوں کی مشترکہ امیدوار محترمہ کمار نے آج پارلیمنٹ ہاؤس میں الیکشن الیکٹورل آفیسر لوک سبھا سکریٹری جنرل انوپ مشرا کے پاس اپنا پرچہ نامزدگی داخل کیا۔اس موقع پر محترمہ سونیا گاندھی، سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ، نیشنلسٹ کانگریس پارٹی کے سربراہ شرد پوار، مارکسی کمیونسٹ پارٹی کے سکریٹری جنرل سیتا رام یچوری، کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا کے سکریٹری ڈی راجہ، بہوجن سماج پارٹی کے جنرل سکریٹری ستیش مشرا، سماج وادی پارٹی کے نریش اگروال اور ڈی ایم کے رہنما کنی موجھی اور کئی دیگر جماعتوں کے لیڈران بھی موجود تھے۔
اس انتخاب میں محترمہ میرا کمار کا مقابلہ قومی جمہوری محاذ (این ڈی اے) کے امیدوار رام ناتھ کووند سے ہے۔ صدارتی الیکشن 17 جولائی کو اور ووٹوں کی گنتی 20 جولائی کو ہوگی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: President poll is battle of ideology and principles sonia gandhi in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply