کرواندھی کے انتقال ہوتے ہی جانشینی کے لیے دونوں بیٹوں میں ٹھن گئی

نئی دہلی: ڈی ایم کے سربراہ کروناندھی کے انتقال کو چند روز بھی نہیں گذرے کہ تمل ناڈو کی سب سے بڑی حزب اختلاف اور کئی بار بر سر اقدار رہنے والی جماعت ڈی ایم کےمیں ایک بار پھر خانہ تکرار شروع ہو گئی۔

دونوں بیٹے ایم کے اسٹالن اور ایم کے الاگیری پارٹی کی قیادت کے دعویدار ہیں۔ابھی ڈی ایم کے کا پارٹی کا قائد منتخب کرنے کا عمل شروع بھی نہیں ہوا ور منگل کے روز اس کے لیے میٹنگ طلب کی گئی ہے لیکن اس سے پہلے ہی کروناندھی کے بڑے بیٹے ایم کے الاگیری اپنے والد کروناندھی کی قبر پر گئے اور دعویٰ کیا کہ ان کے والد کے حقیقی رشتہ داروں نے ان کی حمایت کی ہے۔

الا گیری نے میڈیا سے کہا کہ ”میرے والد کے تمام اصلرشتہ دار میرے ساتھ ہیں۔ تمل ناڈو میں پارٹی کے تمام حامی میری طرف ہیں اور اس سے میری حوصلہ افزائی ہو رہی ہے۔اور وقت آنے پر یہ ثابت ہو جائے گا۔واضح ہو کہ جب سے کروناندھی بیمار پڑے ہیں اسٹالن ہی پارٹی کے ورکنگ صدر کے طور پر ذمہ داریاں نبھا رہے ہیں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Power tussle in dmk party supporters on my side says alagiri days in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply