سپریم کورٹ نے قابل دست اندازی پولس جرائم میں ملوث سیاستدانوں کے الیکشن لڑنے پر پابندی کا فیصلہ محفوظ کر لیا

نئی دہلی:سپریم کورٹ کی ایک آئینی بنچ نے اس عرضی پر اپنا فیصلہ محفوظ کر لیا جس میں عدالت عظمیٰ سے استدعا کی گئی تھی کہ سنگین جرائم میں جس میں پانچ سال سے زیادہ کی سزا ہو اور اگر کسی شخص کے خلاف الزامات طے ہوتے ہیںتو اس کے انتخابات میں حصہ لینے پر پابندی لگا دی جائے۔

اور اگر کوئی پہلے ہی سے پارلیمنٹ یا اسمبلی کا رکن ہو تو اس کی رکنیت ختم کر کے اس کے انتخابات لڑنے پر بھی پابندی لگا دی جائے۔چیف جسٹس دیپک مشرا کی سربراہی والی ایک پانچ ججی بنچ نے مرکزی حکومت اور تمام مدعیان کے دلائل سننے کے بعد اپنا فیصلہ محفوظ کر لیا۔

سماعت کے دوران مرکز نے ان عذر داریوں کی مخالفت کی اور سپریم کورٹ سے کہا کہ جب تک کوئی شخص مجرم نہ قرار دے دیا جائے اسے انتخاباتلرنے سے کیسے روکا جا سکتا ہے؟

جس پر مدعیان نے دلیل پیش کی کہ اگر ان لوگوںپر قابل دست اندازی پولس جرائم کے مرتکب ہونے والے افراد پر پابندی عائد نہیں کی جائے گی تو سیاست کو جرائم سے پاک کرنا مشکل ہو جائے گا۔لہٰذا ایسے مجرم سیاستدانوںپر پابندی لگنی چاہیے سپریم کورٹ اس ضمن میں ان سیاسی پارٹیوں کوجن کے اراکین اس قسم کے جرائم میں ملوث ہیں، ہدایات جاری کرے۔

الیکشن کمیشن آف انڈیا نے بھی مدعیان کے موقف کی تائید کی اور کہا کہ ایسے سیاست دانوں پر جو قابل دست اندزی پولس جرم میں ملوث ہیں پابندی عائد کی جائے۔حکومت ہند کی جانب سے اتارنی جنرل کے کے وینو گوپال نے مدعیان کی عرضیوں کی مخالفت کی ۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Politicians charged with cognisable offence to be barred sc reserves order in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply