مودی، روپانی غیر گجراتیوں کوگجرات چھوڑنے سے نہیں روک سکتے تو حکومت چھوڑ دیں: کانگریس

نئی دہلی :گجرات میں ایک سوا سال کی بچی کے ساتھ جنسی زیادتی کے الزام میں بہار کے ایک مزدور کی گرفتاری کے بعد غیر گجراتیوں کے خلاف پھوٹ پڑنے والے تشدد پر سب سے بڑی حزب اختلاف کانگریس نے شدید رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر وزیر اعظم نریندر مودی اور گجرات کے وزیر اعلی وجے روپانی گجرات میں رہائش پذیر غیر گجراتیوں کو تحفظ فراہم نہیں کرسکتے تو انہیں اقتدار سے دستبردار ہوجانا چاہیے۔

کیونکہ ملک کی دیگر ریاستوں کی طرح گجرات بھی ملک کے ہر شخص کا ہے اور جو چاہے وہاں بود و باش اختیار کر کے رہ سکتا ہے۔ پارٹی ترجمان پرینکا چترویدی نے پیر کے روز نئی دہلی میں واقع پارٹی ہیڈکوارٹر میں میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ گجرات میں ہوئی اس واردات کے بعد اترپردیش، بہار ،مدھیہ پردیش اور راجستھان کے لوگوں کو تشدد کا نشانہ بنایا نے کے ساتھ ساتھ ریاست سے بھگا یا بھی جا رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بی جے پی کو یہ سمجھنا چاہئے کہ دوسری ریاستوں سے لوگ کسی ریاست میں جاتے ہیں تو وہاں کی معیشت اور ترقی میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ مسٹر مودی کو اترپردیش کے عوام نے وارانسی سے منتخب کر کے وزیراعظم بنایا ہے ۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Pm rupani should quit if migrant workers in gujarat are not protectedcongress in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News
What do you think? Write Your Comment