وزیر اعظم نے ایوان کی کارروائی بحسن و خوبی چلنے کے لیے حزب اختلاف سے تعاون مانگا

نئی دہلی: وزیر اعظم نریندر مودی نے پارلیمنٹ کا سرمائی اجلاس بحسن و خوبی چلنے دینے کے لیے حزب اختلا ف سے بھرپور تعاون دینے کی اپیل کی۔ انہوں نے لوک سبھا اجلاس شروع ہونے سے عین قبل میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے یہ بھی کہا کہ ان کی حکومت اس دوران ایسے بل پیش کرے گی جن کے دور رس اثرات مرتب ہوں گے۔
وزیر اعظم نے کہا کہ انہیں امید ہے کہ ایوانکی کارروائی کو احسن طریقہ سے چلنے کا موقع دیا جائے گا اور جمہوریت یقیناً مضبوط ہو گی۔انہوں نے مزید کہا کہ انہیں قوی امید ہے کہ 2017-18کا سرمائی اجلاس بامعنی اور ثمر آور ہوگا۔اور اس سے ملک کو فائدہ ہوگا۔ نیز مجھے اس دوران مثبت اورنئے خیالات سامنے آنے کی بھی امید ہے۔
لیکن دوسری جانب کانگریس اس پر مصر ہے کہ گجرات میںانتخابی مہم کے دوران سابق وزیر اعظمڈاکٹر منموہن سنگھ پر پاکستان کے حوالے سے عائد کردہ الزام پر مسٹر مودی معافی مانگیں۔پارلیمنٹ کے اجلاس کے دوران جو14بل پیش کیے جاسکتے ہیں ا ن میں ایک مالی بل ہے۔علاوہ ازیں اشیا و خدمات ٹیکس بل2017، اور طلاق ثلاثہ کے حوالے سے مسلم خواتین (تحفظ حقوق نکاح) بل2017بھی شامل ہے۔

Title: pm narendra modi seeks oppositions cooperation for meaningful session | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply