کشمیر میں تشدد پاکستانی اعانت یافتہ دہشت گردی کا نتیجہ:مودی

نئی دہلی:کشمیر میں تشدد کو پاکستانی اعانت یافتہ دہشت گردی کا نتیجہ قرار دیتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی نے آج کہا کہ دہشت گردی سے پوری سختی سے نمٹا جائے گا او ر مخالف طاقتیں قانون کی حکمرانی کے تئیں ہندوستان کی عہد بندی کو اس کی کمزوری نہ سمجھیں۔ مسٹر مودی نے وادی کشیمر کی موجودہ صورت حال پر غور کرنے کے لئے یہاں ہوئی کل جماعتی میٹنگ میں اپنی اختتامی تقریر میں کہا کہ حکومت کشمیر کے معاملے پر آئین کے بنیادی اصولوں کے تحت مستقل اور پرامن حل کے تئیں پابند عہد ہے اور اس کے لئے سابق وزیر اعظم اٹل بہاری باجپئی کے ذریعہ دکھائے گئے راستے پر عمل کیا جارہا ہے۔
انہوں نے کہا کہ مرکز اور ریاست کی حکومت وہاں کے ہر کسی شخص کی تمام جائز شکایتوں کو سنے گی اور انہیں دور کیا جائے گا لیکن تشدد’ دہشت گردی اور ہندوستان مخالف سرگرمیوں سے سختی سے نمٹا جائے گا۔ وزیر اعظم نے کشمیر میں 1989-90میں دہشت گردی شروع ہونے سے آج تک سیکورٹی فورسیز کی کارروائی میں ضبط ہتھیاروں او راس دوران پانچ سو سے زیادہ غیر ملکی دہشت گردوں کی ہلاکت کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان خواہ لاکھ جھوٹ بولے لیکن سرحد پار دہشت گردی کے سلسلے میں دنیا اس کی باتوں پر قطعی بھروسہ نہیں کرے گی۔انہو ں نے کہا کہ اتنے ہتھیار برآمد ہوں اتنے غیر ملکی دہشت گرد وادی میں مار کاٹ کے لئے آئیں ہو’ پھر پاکستان لاکھ جھوٹ بولے تو بھی دنیا کبھی اس کے جھوٹے پروپگنڈہ کو تسلیم نہیں کرے گی ۔
وزیر اعظم نے کہا کہ کچھ عناصر کے پروپگنڈے کے باوجود کشمیر میں غلط فہمی اور عدم تشدد پھیلانے والوں او ربچوں کو اکسانے والوں کا فیصد بہت کم ہے۔ ہر کشمیری امن چین چاہتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ قانون و انتظام کے لئے وہاں کچھ اقدامات کئے گئے ہیں تاکہ امن پسند عوام کی زندگی پر منفی اثرات مرتب نہ ہوں لیکن عام شہریوں کو ان سے اتنی پریشانی نہیں ہوئی جتنی علیحدگی پسندوں کے ذریعہ ہڑتال کی وجہ سے ہوئی ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Pm narendra modi at all party meeting in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply