بڑے نوٹ بند ہونے سے عام آدمی کیش لیس (بے پیسہ) ہو گیاہے : راہل گاندھی

نئی دہلی: دونوں بڑے نوٹوں کی منسوخی کے معاملے پر وزیراعظم نریندر مودی پر اپنے حملے جاری رکھتے ہوئے کانگریس کے نائب صدر راہل گاندھی نے آج کہا کہ مسٹر مودی نے ہندوستان کے لوگوں کو کیش لیس (بے پیسہ) کردیا ہے جبکہ بڑی بڑی کمپنیاں بنکوں میں نقد جمع کررہی ہیں۔
اترپردیش میں دادری کی منڈی میں بیوپاریوں سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر گاندھی نے کہا کہ دولت مند لوگ عقبی دروازے سے پیسہ نکال رہے ہیں۔ وزیراعظم نریندر مودی کہتے ہیں کہ نوٹ بندی کا مقصد معیشت کو نقدی سے پاک بنانا ہے مگر حقیقت یہ ہے کہ غریب آدمی کیش لیس ’بے پیسہ‘ ہوگیا ہے۔
کانگریس کے نائب صدر نے کہا کوئی امیر کوئی کالے دھن والا لائن میں نہیں لگا ہے۔ وہ پچھلے دروازے سے بآسانی پیسہ نکال رہے ہیں۔ مسٹر گاندھی نے الزام لگایا کہ نوٹ منسوخی کا خاص مقصد امیروں اور کارپوریٹ طبقہ کے لوگوں کو فائدہ پہنچانا ہے اور بینکوں میں عام لوگوں کے جمع پیسہ کے ذریعہ ان کی مدد کرنا ہے۔ ملک کے صنعتی گھرانوں نے بینکوں سے آٹھ لاکھ کروڑ روپے قرض لے رکھے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ کیش لیس (بے نقد) معیشت کی بات کرنے میں صنعتی طبقہ کی مدد کے لئے مہم کا حصہ ہے۔ انہوں نے کہا جب کیش لیس دنیا آئے گی تب کسانوں کو پتہ بھی نہیں چلے گا کہ 5 فیصد پیسہ ان کے علم میں آئے بغیر سیدھا بڑے صنعت کاروں کی جیب میں چلاجائے گا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Pm modis cashless move has made the poor cashless rahul gandhi in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply