یو پی والوں نے جو آشیرواد لوک سبھا انتخابات میں دیا تھا اسمبلی چناؤ میں بھی اسی کی آرزو رکھتا ہوں: مودی

گورکھپور : وزیر اعظم نریندر مودی نے آج کہا کہ نسل پرستی اور کنبہ پروری کی سیاست سے اتر پردیش کا بھلا ہونے والا نہیں ہے۔ دہائیوں سے دماغی بخار جیسی جان لیوا بیماری کا دکھ جھیل رہے گورکھپور میں آل انڈیا انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز (ایمس) کا سنگ بنیاد اور 26 سال سے بند پڑے کھاد کارخانہ کو شروع کرنے کی بنیاد رکھنے کے بعد مسٹر مودی نے سماجوادی پارٹی (ایس پی)، بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) اور کانگریس کا نام لئے بغیر ریلی میں کہا کہ نسل پرستی اور کنبہ پروری کی سیاست نے اترپردیش کو پیچھے دھکیل دیا۔
نسل پرستی کا زہر اور کنبہ پروری کا کھیل اتر پردیش کا بھلا نہیں کر سکتا۔ مسٹر مودی نے اشاروں اشاروں میں اگلے برس ہونے والے ریاستی انتخابات میں عوام سے حمایت دینے کی اپیل بھی کی۔انہوں نے کہا کہ کنبہ پروری اور نسل پرستی کی سیاست بہت ہو چکی۔ اس طرح کی سیاست سے کیا کبھیعوام کی جھولی بھر دی۔ اب وقت آ گیا ہے کہ ترقی کی سیاست کی جائے کیونکہ اسی سے بھلا ہوگا۔انہوں نے اعلان کیا کہ جس طرح لوک سبھا انتخابات میں اترپردیش کے لوگوں کا آشیرواد ملا ویسے ہی آنے والے دنوں میں ملے گا تو ریاستی عوام کاخواب پورا ہوگا۔مسٹر مودی نے بالواسطہ طور سے اکھلیش یادو حکومت پر ریاست کی ترقی میں دلچسپی نہ لینے کا بھی الزام لگایا۔
انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت نے صحت شعبہ کے لئے سات ہزار کروڑ روپے بجٹ میں مختص کئے ہیں۔ یہ چھوٹی رقم نہیں ہے لیکن دکھ کی بات یہ ہے کہ اتر پردیش سرکار دو ہزار آٹھ سو پچاس کروڑ روپے ہی لے سکی ہے۔ ریاستی حکومت کو روپے لینے کی فرصت ہی نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ لکھنؤ میں ایسی حکومت لائیں جو آپ کے لئے کام کرے۔ترقی نہ کرنے والی حکومت نہیں آنی چاہئے۔
انہوں نے کہاکہ اترپردیش نے انہیں بہت کچھ دیا ہے۔ اس کا قرض چکانے کے لئے دن رات لگا ہوں۔ بھوجپوری میں اپنی تقریر کا آغاز کرتے ہوئے کھاد کارخانہ کو شروع کروانے کا سہرابھی انہوں نے عوا م کے سر باندھا۔ وزیر اعظم نے کہا کہ اگر عوام نے انہیں طاقت نہ دی ہوتی تو 26 سال سے لٹکا یہ کام اب بھی نہ پورا ہوتا۔ مرکز میں عوام کے مفادات کے لئے کام کرنے والی حکومت بنی تو عوامی بہبود میں کیے جانے والے کام نظر آنے لگے۔ یوگی آدتیہ ناتھ سمیت اسٹیج پر موجود ممبران پارلیمنٹ کی تعریف کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ریاست کے ان عوامی نمائندوں کوعوامی ترقی کے کاموں کو پایہ تکمیل تک پہنچانے کی لگن سونے تک نہیں دیتی۔ انہوں نے کہا کہ اتر پردیش میں سیاحت کے بے پناہ امکانات ہیں۔ طیارہ سروس کی نئی پالیسی سے سیاحت کو فروغ ملے گا۔ سڑکوں کی تعمیر پر ہزاروں کروڑ روپے لگا رہے ہیں۔
اس ریاست میں کئی بودھ مقامات ہیں۔ سیاحت کے کئی مرکز ہیں۔ اگر سیاحوں کو سہولت ملے گی تو یہاں روزگار بڑھے گا۔ نیپال سرحد سے ملحق گورکھپور اور اس کے آس پاس کے علاقوں میں ہورہی سڑک تعمیرات کی انہوں نے سلسلہ وار تفصیلات بھی دیں۔ وزیر اعظم مودی نے کہا کہ ملک کی ترقی کرنی ہے تو دو پہیوں پر ترقی رتھ چلانا ہوگا۔ دو پہیوں کے طورپر ملک کے مشرقی اور مغربی حصوں کو مضبوط کرنا ہوگا۔ گجرات، گوا، ہریانہ، کرناٹک کی طرح ہی اتر پردیش، بہار، مغربی بنگال، اڑیسہ اور شمال مشرقی ریاستوں کی ترقی ضروری ہے۔ ملک کے مشرقی حصوں کو آگے بڑھانے کے لئے انقلابی طریقہ سے آگے بڑھنا ہوگا۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ ملک میں دوسرا سبز انقلاب مشرقی علاقوں سے شروع ہونے والا ہے۔ اس کے لئے کسانوں کو کھاد چاہئے۔ المیہ یہ ہے کہ ملک کے کھاد کارخانہ بند ہیں اور سابقہ حکومتوں نے انہیں کھلوانے کے بجائے بیرون ملک سے کھاد درآمد کرنے میں سہولت سمجھی۔ گورکھپور کے ساتھ ہی برونی اور سندری کے بند کارخانہ کو بھی چالو کروایا جائے گا۔
مسٹر مودی نے کہا کہ جب وہ گجرات کے وزیر اعلی تھے تو مرکزی حکومت کو یوریا کے لئے خط لکھتے رہتے تھے۔وزیر اعظم بننے کے بعد ان کے پاس اسی سلسلے میں وزرائے اعلی کے خط آتے تھے لیکن اب خط آنے بند ہو گئے ہیں کیونکہ یوریا کی نیم کوٹنگ کراکر اس کی کالابازاری روک دی گئی۔ اب نہ تو کسان کھاد کے لئے لائن لگا رہا ہے اور نہ ہی اسے لاٹھیاں کھانی پڑ رہی ہیں۔ پہلے یوریا کسانوں کے بجائے کیمیکل فیکٹریوں میں چلا جاتا تھا۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ دنوں میں ایسی حکمت عملی بنائی جائے گی جس سے ایران یا کسی دوسرے ملک سے کھاد منگانی ہی نہ پڑے۔ اپنے ملک میں کھاد بنانے کے ساتھ ہی ان ممالک میں بھی اسے بنائیں گے جہاں گیس دستیاب ہوگی۔ (یو این آئی)

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Pm modi lays foundation stone for fertiliser plant in gorakhpur in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply