وزیر اعظم کے زیر صدارت اجلاس میں سندھ آبی معاہدے کا ہمہ پہلو جائزہ لیا گیا

نئی دہلی :اڑی میں ہلاکت خیز دہشت گردانہ حملے کے بعد ہندستان اور پاکستان کے درمیان بڑھتی ہوئی کشیدگی کے درمیان وزیر اعظم نریندر مودی نے آج پاکستان کے ساتھ سندھ آبی معاہدے کا جائزہ لینے کے لئے طلب کردہ میٹنگ کی صدارت کی۔ اس میٹنگ میں سندھ آبی معاہدے کا ہر پہلو سے جائزہ لیا گیا۔تاہم ابھی اس آبی معاہدے میں کسی تبدیلی پر کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا ہے۔
میٹنگ میں قومی سلامتی کے مشیر اجیت ڈوبھال، سیکرٹری خارجہ ایس جے شنکر،آبی وسائل سیکریٹری کے علاوہ وزیر اعظم کے دفتر کے دیگر افسران موجود تھے۔ میٹنگ میں پاکستان کی جانب بہنے والی سندھ، جہلم اور چناب دریاؤں کے پانی کے بہتر استعمال پر بھی تبادلہ خیال ہوا۔ دریائے سندھ کے پانی کی تقسیم پر پاکستان کے ساتھ 56 سال پہلے معاہدہ ہوا تھا۔ اس معاہدے کے تحت پاکستان کو سندھ، جہلم اور چےناب دریاؤں کا 80 فیصد پانی ملتا ہے۔
آبی وسائل کی وزارت اور وزارت خارجہ کے حکام نے وزیر اعظم کی رہائش گاہ پر اس سلسلے میں مسٹر مودی کو پانی کی تقسیم سے متعلق مختلف حقائق سے آگاہ کرایا۔ جموں کشمیر کے اڑی میں فوجی ٹھکانے پر حال میں ہوئے دہشت گردانہ حملے کے بعد ہندوستان نے 22 ستمبر کو واضح کر دیا تھا کہ اس طرح کے معاہدے پر مسلسل عمل کے لئے فریقوں کے درمیان باہمی اعتماد اور تعاون کو اہمیت حاصل ہے اس طرح کے معاہدے یک رخی نہیں ہو سکتے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Pm modi assesses indus waters treaty with pakistan in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply