افغانستان میں ہلاک داعش کے دہشت گرد کی موت کی کیرل میں رشتہ داروں نے تصدیق کر دی

کاسر گوڈ: گزشتہ ماہ افغانستان میں ڈرون حملہ میں ہلاک ہونے والے دولت اسلامیہ فی العراق و الشام (داعش) کے دہشت گرد کی تصویر دیکھ کر اس کے رشتہ داروں نے آج اس کی موت کی تصدیق کردی ہے۔ کیرالہ کے کاسرگوڈ میں پڈانا سے لاپتہ ہونے والے 11 افراد میں داعش کا دہشت گرد بھی شامل تھا۔
ذرائع کے مطابق عبدالحفیظ نامی شخص نے اپنے اکاؤنٹ سے سوشل میڈیا میں حفیظ الدین ٹی کے کی تصویر بھیجی تھی، جو ان لاپتہ افراد میں شامل تھا۔ شبہ ہے کہ اس نے داعش میں شمولیت اختیار کرلی تھی۔ قبل ازیں اس کے رشتہ داروں کو اطلاع ملی تھی کہ افغانستان کے ننگرہار علاقے میں ڈرون حملے کے دوران 25 فروری کو حفیظ الدین کی موت ہوگئی تھی اور بعدازاں اس کی تدفین کردی گئی تھی۔ پیغام میں یہ بھی کہا گیا تھا کہ حفیظ الدین کو شہادت نصیب ہوئی ہے اور ’ہم اپنی باری کا انتظار کر رہے ہیں‘۔
تاہم اب تک سرکاری طور پر اس کی موت کی توثیق نہیں ہوئی ہے۔ ایجنسیوں نے، جو ریاست کے مختلف حصوں سے 21 افراد کے لاپتہ ہونے کی جانچ کر رہی ہیں، قبل ازیں کہا تھا کہ ہو سکتا ہے کہ وہ لوگ شام یا افغانستان گئے ہوں۔

Title: photographs confirm death of keralite is activist in afghan | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply