کشمیریوں سے پر امن رہنے کی اپیل کے ساتھ پارلیمنٹ کا بارانی اجلاس ختم

نئی دہلی : گڈس اینڈ سروس ٹیکس (جی ایس ٹی) سے متعلق تاریخی آئینی ترمیم (122) بل اور کچھ دیگر اہم بلوں کو منظور کرنے اور کشمیر کے لوگوں سے امن کی بحالی کی اپیل کے ساتھ ہی پارلیمنٹ کا مانسون اجلاس جمعہ کو غیر معینہ مدت کے لیے ملتوی کر دیا گیا۔
اس کے ساتھ ہی 16ویں لوک سبھا کا نواں اور راجیہ سبھا کا 240واں سیشن ختم ہوگیا۔ لوک سبھا اسپیکر سمترا مہاجن نے وقفہ صفر شروع ہونے سے قبل اور راجیہ سبھا کے چیرمین حامد انصاری نے وقفہ سوالات شروع ہونے سے پہلے ہی سیشن کے ختم ہونے کا اعلان کردیا۔
گذشتہ 18 جولائی کو شروع ہوئے اس اجلاس کے دوران راجیہ سبھا اور لوک سبھا کی 20 میٹنگیں ہوئیں۔ لوک سبھا میں مجموعی طورپر 121 گھنٹے کام کاج ہوا، رکاوٹ کی وجہ سے 6 گھنٹے 33 منٹ کا وقت ضائع ہوا لیکن اراکین نے 18 گھنٹے 5 منٹ فاضل وقت بیٹھ کر کام کاج نمٹایا ۔
راجیہ سبھا میں 112 گھنٹے سے زیادہ کام کاج ہوا جبکہ ہنگامے کی وجہ سے 20 گھنٹے سے زیادہ کا وقت ضائع ہوا لیکن اراکین نے 20 گھنٹے فاضل وقت بیٹھ کر کام کاج نمٹایا۔

Title: parliament mansoon sesion adjourned sine die | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply