وزیر پارلیمانی امور نے مانسون اجلاس کو بامعنی قرار دیا

نئی دہلی :پارلیمانی امور کے وزیر اننت کمار نے پارلیمنٹ کے بارانی اجلاس کو بامعنی قرار دیتے ہوئے اپوزیشن کے تعاون کا اعتراف تو کیا لیکن ساتھ ہی دیگر پسماندہ طبقات کمیشن کو آئینی درجہ دینے میں رخنہ ڈالنے پر کانگریس کو تنقید کا نشانہ بھی بنایا۔ پارلیمنٹ کے بارانی اجلاس کے غیر معینہ مدت کے لئے ملتوی ہونے کے بعد مسٹر کمارنے ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں لوک سبھا اور راجیہ سبھا کی کارروائی مجموعی طور پر بامعنی رہی۔
انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کے تعاون سے کئی اہم بل منظور کئے گئے اور کم مدت کا اجلاس ہونے کے باوجود لوکسبھا میں 79.94 فیصد اور راجیہ سبھا میں 79.95 فیصد کام کاج ہوا۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ نریندر مودی حکومت دیگر پسماندہ طبقات کمیشن کو آئینی درجہ دینے کے لئے پرعزم ہے۔ اس کے لئے حکومت پارلیمنٹ میں آئین میں ترمیم کابل لے کر آئی تھی لیکن کانگریس کے رویہ کی وجہ سے یہ بل دونوں ایوانوں میں اختلاف رائے کی نذر ہوگیا۔ انہوں نے کہاکہ کانگریس نے اس بل میں ترمیم پیش کر کے اسے روک دیا جو اس کی ایک قابل مذمت اور غلط حرکت ہے۔ پریس کانفرنس میں پارلیمانی امور کے وزیر مملکت مختار عباس نقوی اور ایس ایس اہلوالیا بھی موجود تھے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Parliament adjourned sine die govt flays oppn for stalling obc bill in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News
Tags: ,

Leave a Reply