پاکستانی خاتون کو 13سال بعد ہندوستانی شہریت حاصل

گورداسپور: پنجاب کے ضلع گورداسپور کے شہر قادیان کی ایک پاکستانی خاتون کو 13سال کے طویل انتظار کے بعد آخر کار ہندوستانی شہریت دے دی گئی۔گورداسپور کے ڈپٹی کمشنر پردیپ سبھروال نے اتوار کے روز بتایا کہ طاہرہ حضور نام کی اس پاکستانی خاتون کو ہفتہ کی شام میں ہندوستانی شہریت دی گئی۔ طاہرہ کی 2003میں قادیان کے ایک رہائشی مقبول احمد سے شادی ہوئی تھی۔
33سالہ طاہرہ نے جو پاکستان میں فیصل آباد کی رہائشی تھی، مارچ2011میں ہندوستانی شہریت کے لیے درخواست دی تھی لیکن طاہرہ کو نہ ہندوستانی شہریت دی گئی اور نہ ہی پاکستان کا عارضی ویزا دیا گیا۔شہریت نہ ملنے کے باعث وہ 13سے قادیان سے باہر تک نہیں نکل سکی۔طاہرہ کی دو بیٹیاں اور ایک بیٹا ہے ۔ان سب کو ہندوستانی شہریت حاصل ہے اور وہ کہیں بھی آنا جانا کر سکتے ہیں۔ہندوستانی شہریت ملنے سے خوش طاہرہ نے کہا کہ وہ سب سے پہلے گذشتہ پانچ سال سے بیمار اپنی ماں کو دیکھنے پاکستان جائے گی۔
اس نے کہا کہ وہ اب ہندوستانی پاسپورٹ جاری کرنے کی بھی درخواست دے گی۔اس کا شوہر مقبول اور اس کی ایک بیٹی سمیہ ایک رشتہ دار کی شادی میں شرکت کے لیے فی الحال یوکے گئے ہوئے ہیں۔چونکہ اس کے پاس ہندوستانی شہریت اور پاسپورٹ نہیں تھا اس لیے وہ نہیں جا سکی۔

Title: pakistani woman tahira gets indian citizenship | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply