پاکستان نے کلبھوشن کی فیملی ملاقات میں ماں اور بیوی کو بیوہ کی طرح پیش کیا: سشما سوراج

نئی دہلی: پاکستان کی جیل میں قید کلبھوشن جادھو کی فیملی کے ساتھ کی گئی بدسلوکی کو لیکر آج وزیر خارجہ سشما سوراج نے راجیہ سبھا میں بیان دیا ۔ سشما سوراج نے اس مدعے پر پارلیمنٹ میں بیان دیتے ہوئے کہا کہ کلبھوشن جادھو کے پریوار کی ملاقات سفارتی کوششوں سے ہوئی تھی۔ حکومت نے جادھو معاملے کو انٹر نیشنل کورٹ میں پیش کیا ،جس کے بعد ان پر جاری کئے گئے پھانسی کے فیصلے کوٹال دیا گیا ہے۔ مشکل کی گھڑی میں حکومت ہند جادھو کی فیملی کے ساتھ ہے۔
ہم نے پریوار کے ممبروں کی جادھو سے ملنے کی خواہش کو پورا کیا۔ یہ دکھ کی بات ہے کہ ملاقات میں اس طرح کا سلوک کیا گیا، سشماسوراج نے کہا کہ پاکستان نے اس ملاقات کو پروپیگنڈا بنایا۔ جادھو کی ماں صرف ساڑی پہنتی ہیں، ان کے بھی کپڑے بدلوائے گئے، میڈیا کو ماں اور بیوی کے قریب آنے دیا گیا ، جو ہماری شرطوں کے خلاف ہے۔ ملاقات سے واپسی کے بعد ماں اور بیوی نے بتایا کہ کلبھوشن دباؤ میں ہیں۔ ان کے قید کرنے والوں نے جو انہیں بولنے کے لئے کہا تھا جادھو صرف وہی بول رہے تھے۔
پاکستان جادھو کی ماں اور بیوی کے جوتوں کے ساتھ کچھ شرارت کر سکتا ہے۔ اس ملاقات میں صرف اور صرف انسانی حقوق کی قوانین کی خلاف ورزی ہوئی ہے۔ پاکستان میں جانے سے پہلے ایئر پورٹ پر دو جگہ ماں اور بیوی کی جانچ کی گئی ۔ تو کیا جب کوئی چپ نہیں دیکھائی دی ، پورا ایوان پاکستان کے اس سلوک کی مذمت کرتا ہے۔
کلبھوشن نے اپنی ماں کو دیکھتے ہی سب سے پہلے پوچھا کے بابا کیسے ہیں کیونکہ جیسے ہی اس نے ماں کو بنا منگل ستر اور چوڑی کے دیکھا اسے شک ہوا کہ کہیں کچھ منہوس خبر نہ ہو۔ سوراج نے کہا کہ دونوں شادی شدہ کو ایک بیوہ کی طرح پیش کیا گیا۔ جادھو کی ماں اپنے بیٹے سے مراٹھی میں بات کرنا چاہتی تھی ،جب وہ بات کرتی تھیں تو انٹرکوم بند کیا تھا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Pak used jadhav family reunion as propaganda tool says sushma swaraj in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News
What do you think? Write Your Comment