مرشدآباد میں بجلی بحران کے خلاف احتجاج کے دوران تشدد ایک ہلاک

کلکتہ:مغربی بنگال کے مرشدآباد میں گاو¿ں میں بجلی کی بحالی کیلئے نیشنل ہائی وے 34نمبر کا گھیراو¿ کررہے ہجوم اور پولس کے درمیان تصادم میں جمال نام کے ایک شخص کی موت ہوگئی ہے اور 13افراد جس میں 9پولس اہلکار بھی شامل ہیں زخمی ہوگئے ہیں۔
بات چیت ناکام ہونے کے بعد پولس نے فرکا پولس اسٹیشن کے تحت جکری میں بھیڑ پر لاٹھی چارج شروع کردیا اور لوگوں س کو منتشر کرنے کیلئے ہوا میں فائرنگ بھی کی گئی۔ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل آف پولس (لا اینڈ آرڈر)انوج شرما نے کہا کہ بھیڑ کے ذریعہ سرکاری املاک کو نقصان پہنچانے کے بعد ہوا میں فائرنگ کی گئی۔انہوں نے کہا کہ بھیڑ کے مشتعل ہونے کے بعد حالات کو قابو کرنے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔
اس واقعہ کی جانچ شروع کردی گئی ہے۔اس معاملے میں 21افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔فرا کا پولس اسٹیشن کے انسپکٹر انچارج سمیت 9پولس اہلکار زخمی ہوگئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کئی بم بھی برآمد ہوئے ہیں ان میں سے دو کارآمد بم ہیں۔پولس اہلکاروں کے علاوہ 4گاو¿ں والے بھی زخمی ہوگئے ہیں۔ان سب کو اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔اس جھڑپ میں 15بسیں، ایک سرکاری کار کو نقصان پہنچا ہے۔
مقامی لوگوں کا مطالبہ تھا کہ یہاں بجلی سپلائی بحال کی جائے۔ مرشدآبادکے ایس پی مکیش شرما نے کہا کہ جھکرا میں کئی دنوں سے بجلی نہیں ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: One killed 9 policemen injured in murshidabad in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply