لوک سبھا کارروائی منگل تک ملتوی، شور و غل کے باعث تحریک عدم اعتماد نوٹس پیش نہیں ہو سکا

نئی دہلی:دوشنبہ کو بھی لوک سبھا میں زبردست شور وغل کے باعث نریندر مودی حکومت کے خلاف تیلگو دیشم اور وائی ایس آر کانگریس کی تحریک عدم اعتماد کا نوٹس ایوان میں پیش نہیں کیا جاسکا۔
اور اسپیکر سمترا مہاجن نے غل غپاڑے کے درمیان ایوان کی کاروائی منگل تک کے لیے موقوف کر دی۔ جمعہ کو بھی دونوں پارٹیوں کی جانب سے یہ نوٹس دیا گیا تھا لیکن ایوان مین شور و غل اس قدر تھا کہ کان پڑی آواز سنائی نہیں دے رہی تھی اور مچھلی بازار کا سماں لگ رہا تھا جس کے باعث اسپیکر نے نوٹس کو منظور نہ کرتے ہوئے ایوانکی کارروائی پیر تک کے لیے ملتوی کر دی تھی۔
پیر کو بھی اسپیکر چیخ چیخ کر یہ کہتی رہیں کہ تحریک عدم اعتماد کا نوٹس ملا ہے اگر ایوان میں نظم قائم ہو جائے تو وہ اس نوٹس کی حمایت کرنے والوں کا شمار نہیں کر سکتیں۔اسپیکر چاہ ایوان میں بار بار جمع ہوجانے والے ارکین سے درخواست کرتی رہیںکہ وہ اپنی نشستوں پر واپس چلے جائیں۔لیکن مختلف مطالبات کے ساتھ تیلگو دیشم ۔
ٹی آر ایس، وائی ایس آر کانگریس کے اراکین ایوان کے وسط میں جمع ہو کر نعرے بازی کرتے رہے اور نشتوں پر نہیں گئے۔درں اثنا وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے کہا کہ حکومت چاہتی ہے کہ ایوان میں تحریک عدم اعتماد پر بحث ہو۔انہوںنے کہا کہ حکومت کسی بھی معاملہ پر ایوان میں بحث کے لیے تیار ہے۔اس سے قبل ایوان م میں ہنگامہ آرائی جاری رہنے پراسپیکر نے کہا کہ پورا ملک ہنسی اڑا رہا ہے۔لہٰذا براہ کرم ایوان کی کارروائی چلنے دیں۔ ورنہ پارلیمنٹ مذاق کا موضوع بن جائے گی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: No trust motion not taken up speaker forced to adjourn lok sabha as oppn creates ruckus in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply