دہشت گردوں کے ساتھ تصادموں کی تحقیقات نہیںکرائی جانا چاہئے: بی جے پی جنرل سکریٹری

نئی دہلی:بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے بھوپال سنٹرل جیل سے بھاگنے والے آٹھ سیمی دہشت گردوں کے پولیس تصادم میں مارے جانے کے واقعہ پر کانگریس کی طرف سے سوال اٹھائے جانے پر اعتراض کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وہ دہشت گردوں کے ساتھ ہونے والے ہر تصادم پر سوال اٹھا کر ووٹ بینک کی سیاست کرتی رہی ہے۔
بی جے پی کے ترجمان سری کانت شرما نے میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ اٹلی کانگریس کے کچھ لیڈر دہشت گردوں کے تصادم میں مارے جانے پر سینہ کوبی کرتے ہیں۔ انہوں نے سوال کیا کہ سیمی اور لشکر طیبہ کے تئیں کانگریس کی ہمدردی کیوں ہے اور وہ دہشت گردوں کی حمایت کی سیاست کیوں کرتی ہے۔ مسٹر شرما نے کہا کہ کانگریس بٹلہ ہاؤس تصادم، ممبئی دہشت گردانہ حملے، پارلیمنٹ ہاؤس پر حملے اور افضل گرو معاملات پر بھی سوال اٹھا چکی ہے۔
اس طرح کے تصادموں پر سوال اٹھائے جانے سے سکیورٹی اہلکاروں کا حوصلہ پست ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا قومی تفتیشی ایجنسی (این آئی اے) بھوپال تصادم کی تفتیش کے لئے گئی ہے لیکن بی جے پی کا خیال ہے کہ دہشت گردوں کے ساتھ تصادم کے واقعات کی تحقیقات نہیں کرائی جانی چاہئے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: No probe into police action on terrorists bjp national secretary in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply