کٹیار نے سی بی آئی کے کردار پر اٹھائے سوال

لکھنؤ: بابری مسجد انہدام کیس کے ایک ملزم اور راجیہ سبھا رکن ونے کٹیار نے مرکزی تفتیشی بیورو(سی بی آئی) کے کردار پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا ہے کہ رام مندر کے لئے جیل جانا پڑے تو ان کے لیے اس سے بڑی خوشی کی اور کیا بات ہوگی۔ مسٹر کٹیار نے ٹیلی فون پر ”یواین آئی“سے سپریم کورٹ کے فیصلے پر براہ راست تبصرہ سے بچتے ہوئے سی بی آئی کے کردار پر سوال اٹھایا لیکن عدالت کے فیصلے پر حیرت کا اظہار بھی ضرور کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ ایودھیا کا متنازعہ ڈھانچہ تباہ کرنے کے لئے جب کوئی سازش کی ہی نہیں گئی تو سازش کا مقدمہ کیسے چل سکتا ہے۔ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) لیڈر نے کہا کہ سی بی آئی کی پہل ہی غلط ہے۔
اگرچہ جب ان سے پوچھا گیا کہ مرکز میں آپ کی پارٹی کی حکومت ہے۔ سی بی آئی کس طرح غلط کر سکتی ہے، کیا اس میں کوئی سیاسی سازش ہے۔ اس سوال کے جواب پر انہوں نے کوئی براہ راست جواب نہیں دیا لیکن کہا کہمجھے جو کہنا تھا، کہہ دیا۔“ انہوں نے مرکزی وزیر اوما بھارتی کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ محترمہ بھارتی کو مرکزی کابینہ سے استعفی دینے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔ مسٹر کٹیار نے کہا کہ ایودھیا میں ہر حال میں متنازعہ مقام پر خوبصورت رام مندر کی تعمیر ہونی چاہیے۔ اس کے لیے وہ ایک نہیں کئی بار جیل جانے کے لئے تیار ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ سی بی آئی نے معاملے کو اور دلچسپ بنا دیا ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: No criminal conspiracy in babri masjid demolition vinay katiyar in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply