شراب بندی قانونی منسوخ ہونا نتیش کی شکست :پاسوان

نئی دہلی: خوراک اور عوامی نظام تقسیم کے مرکزی وزیر رام ولاس پاسوان نے بہار میں مکمل شراب بندی قانون منسوخ کئے جانے کے پٹنہ ہائی کورٹ کے فیصلے کو ریاست کے وزیر اعلی نتیش کمار کی ذاتی شکست قرار دیا ہے۔مسٹر پاسوان نے آج یہاں نامہ نگاروں سے کہا کہ اس قانون کے سلسلے میں ریاست کے لوگوں میں غلط فہمی تھی جس کے لئے مسٹر کمار پوری طرح ذمہ دارہیں۔ مکمل شراب بندی قانون میں جان بوجھ کر بہت ساری خامیاں چھوڑ دی گئی تھیں اور اسے ایمانداری سے نہیں تیار کیا گیا تھا۔ اس کا مقصد صرف شہرت حاصل کرنا تھا۔
انہوں نے کہاکہ گذشتہ دس برسوں کے دوران ریاست کی جو صورت حال بنی ہے اس سے نوجوانوں میں شراب کی لت بڑھی ہے۔ گاوں گاوں میں شراب کے ٹھیکے کھلتے گئے اس کے لئے نتیش کمار سرکار ہی ذمہ دار تھی۔ اس سال بنائے گئے شراب بندی قانون کی آڑ میں ریاست میں لوگوں کے ساتھ زیادتی کی گئی۔ عام آدمی کی بات تو درکنار ملک کی خدمت کرنے والے فوجیوں کو بھی نہیں بخشا گیا۔ عدالت کے آج کے فیصلے سے یہ واضح ہوگیا ہے کہ اس قانون کو بنانے کے پیچھے نیت صاف نہیں تھی۔

Title: nitish kumars prohibition policy is illegal says patna high court | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply