بڑے نوٹوں کوغیر مروج کرنے کے فیصلہ سے ملک 25سال پیچھے چلا گیا: این سی پی

نئی دہلی:نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی ) نے مودی حکومت پر الزام لگایا کہ اس نے نوٹ کی منسوخی سے ملک کی ترقی کو پچیس سال پیچھے دھکیل دیا ہے اور اس سے ملک کو چالیس لاکھ کروڑ روپے کا نقصان ہوا ہے۔
پارٹی کی ریاستی یونٹ کے صدر رمیش گپتا نے کہا کہ نوٹ کی منسوخی کی وجہ سے لوگوں کو بھاری پریشانی جھیلنی پڑی۔ اس کی وجہ سے کھیتی اور چھوٹی صنعتی دھندوں کو بہت نقصان ہوا اور روزگار ختم ہو گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی نے نوٹ کی منسوخی کے دوران لائن میں لگنے والے عام آدمی کا مذاق اڑایا اور سنیما میں لوگوں کی لائن لگانے سے اس کا موازنہ کیا لیکن اس دوران جن لوگوں کی موت ہوئی، ان کے خاندان کو معاوضہ دینے کے لئے ابھی تک کچھ نہیں کیا ہے۔
مسٹر گپتا نے کہا کہ حکومت ایک طرف تو کالے دھن اور بدعنوانی کو ختم کرنے کی بات کر رہی ہے اور دوسری طرف اس نے امبانی اور اڈانی جیسے صنعت کاروں کے قرض معاف کر دیئے جس سے ملک کو ہر سال سولہ ہزار کروڑ روپے کا نقصان ہو رہا ہے جبکہ اس رقم سے ملک میں ترقی کے کتنے ہی کام کئے جا سکتے تھے۔ انہوں نے بتایا کہ ریزرو بینک کے سابق گورنر رگھو رام راجن کے مطابق نوٹ کی منسوخی سے ملک کو چالیس لاکھ کروڑ روپے کا نقصان ہوا ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Nation has moved 25 yrs backwards in development index due to demonetisation in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply