میرا وزیر اعظم بننا امبیڈکر جی کی سوچ اور آئین ہندکا مرہون منت ہے: مودی

نئی دہلی:وزیر اعظم نریندر مودی نے ہندوستان کے اولیں وزیر قانون اور آئین ہند کے معمار بابا صاحب بھیم راو¿جی امبیڈکر (بی آر امبیڈکر) کی شان میں قصیدے پڑھتے ہوئے کہا کہ اگروہ ایک ایسی ماں کا، جس نے دوسروں کے گھروں میں برتن مانجھ کر اور جھاڑو پونچھاکر کے ان کی پرورش کی، بیٹا ہونے کے باوجود ملک کے وزارت عظمیٰ کے عہدے تک پہنچ سکے ہیں تو اس کا سہرا امبیڈکر جی کے نظریات اور ملک کے آئین کو جاتا ہے۔
مسٹر مودی نے مدھیہ پردیش کے ضلع اندور میں ا مبیڈکر کی جائے پیدائش مہو(ملٹری ہیڈ کوارٹر آف وارکا مخفف)میں ان کے 125 ویں یوم پیدائش تقریبات کا آغاز ”گرامودے سے بھارت اودے مہم“ (دیہی ترقی تو ہندوستان کی ترقی مہم) سے کیا۔ اس ضمن میں انہوںنے کہا ڈاکٹر امبیڈکر کو قدم قدم پر ذلت و توہین سہنا پڑی لیکن وہ اپنی ذمہ داریوں کو نبھانے میں تندہی سے لگے رہے اور آئین ہند کی تدوین کرتے ہوئے اپنی توہین و تذلیل پر اپنی قلبی و ذہنی تکلیف کا کسی کو احساس تک نہ ہونے دیا ۔ اور سارے وار خاموشی سے اپنی مثبت سوچ کے باعث سینے پر سہتے اور وہیں دباتے رہے۔
اپنی تقریر میں وزیر اعظم نے کانگریس پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ یہ پارٹی60سال تک بلا شرکت غیرے ایوان اقتدار میں مقیم رہی لیکن اس عظیم رہنما کی بیش قیمت میراث کا احترام نہ کر سکی وہ ان کی وراثت کی توہین کرنے پر اظہار ندامت اور توبہ کرے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ لیکن مودی اس عظیم رہنما کے خوابوں کی تکمیل کرنے کی سمت کام کرے گا۔ ڈاکٹر امبیڈکر کی دہلی میں واقع آخری رہائش گاہ 26علی پور روڈ کو ان کی یادگار میں تبدیل کرنے کے لیے اپنی حکومت کے فیصلہ کا حوالہ دیتے ہوئے انہوںنے کہا کہ آخر کانگریس نے گذشتہ 60سال میں یہ کام کیوں نہیں کیا۔
انہوں نے کہا کہ کانگریس کرتی بھی کیسے۔ اسے تو صرف ووٹ بینک کی سیاست میں ہی دلچسپی تھی جس کے لئے اسے سماج کو تقسیم کرنے کے علاوہ کوئی تعمیر کام کرنے کی فرصت ہی کہاں تھی۔انہوں نے کہا کہ کچھ لوگ گذشتہ60سال سے خود کو صرف غریبوں کا مسیحا بتاتے اور ملک کو غریبی سے نجات دلانے والا بتاتے رہے ہیں۔
لیکن یہ سب محض زبانی جمع خرچ اور کاغذی خانہ پری تک ہی محدود رہا۔کانگریس صدر سونیا گاندھی نے بھی امبیڈکر ڈے پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے بابا صاحب بھیم راو¿ امبیڈکر کو کانگریس کے بڑے رہنماو¿ں مہاتما گاندھی ، جواہر لال نہرو اور سردار پٹیل کی صف میں شامل کیا۔ انہوں نے کہا کہ بابا صاحب کا بھی جمہوریت گاندھی جی، نہرو ، پٹیل اور دیگر قد آور مجاہدین آزادی جیسا یقین بھی ان کی قابل فخر میراث میں سے ایک ہے۔

Title: narendra modi claims ambedkar legacy as mayawati cautions dalits | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply