وزیر اعظم پر کسی مخصوص مسلک کے مسلمانوں کی تائید و حمایت کرنے کا الزام سراسر غلط: نجمہ ہپت اللہ

نئی دہلی:مرکزی وزیربرائے اقلیتی امور ڈاکٹر نجمہ ہپت اللہ نے ان الزامات کو خارج کر دیا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کسی ایک مخصوص مسلم فرقہ یا مسلک کے پیروکاروںکی تائید و حمایت کر رہے ہیں یا انہیں بڑھاوا دے رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ وہ ہر شخص کو مساوی سمجھتے ہیں ۔وہ محض کسی ایک چھوٹے سے گروپ یا فرقہ کے نہی بلکہ پورے ملک کے وزیر اعظم ہیں۔
اور پورے ملک کی عوام نے انہیں منتخب کیا ہے۔وہ اس کے بھی وزیر اعظم ہیںجس نے انہیں منتخب کیا ہے اور ان کے بھی ہیں جو ان کی مخالفت کرتے ہیں۔نجمہ نے یہ بات مودی کے حالیہ دورہ سعودی عرب کے حوالے سے کی گئی ایک پریس کانفرنس میں میڈیا کے نمائندوں کو ایک سوال کے جواب میںکہی۔انہوں نے مزید کہا کہ وزیر اعظم کا حالیہ دورہ سعودی عرب ہندستان کے مفادات کے تحفظ او ر دہشت گردی کے خلاف جنگ کے نقطہ نظر سے بہت زیادہ کامیاب اور سود مند ثابت ہوا ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ اس دورے کی نمایاں خصوصیت مسٹر مودی کو مملکت کے اعلیٰ ترین اعزازشاہ عبدالعزیز ایوارڈ کا دیا جانا تھا۔
واضح رہے کہ مسٹر مودی ان چند سربراہان مملکت و ریاست میں سے ہیں جنہیں اس اعزاز سے نوازا گیا ہے ۔اس دورے کی ایک اور اہم خصوصیت مشترکہ اعلامیہ بھی ہے جس میں ہردو ممالک کو درپیش دہشت گردی کے مسئلے کا مفصل ذکر کیا گیا ہے اور ان تمام افراد و گروپوں کو جو اپنے ناپاک عزائم کو عملی جامہ پہنانے کی سازشیں رچ رہے ہیںیک واضح پیغام دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کا دورہ معاشی نقطہ نظر سے بھی اہمیت کا حامل ہے۔ کیونکہ اس دورے سے ملک میں سعودی عرب سے سرمایہ کاری میں اضافہ ہوا ہے۔
انہوں نے یہ بھی کہا کہ وزیر اعظم سعودی عرب گئے ہوں امریکہ گئے ہوں یا دنیا کے کسی اور ملک مین گئے ہوں انہوں نے ملک کے عوام کی بات کی ہے ہر شخص کے بارے میں کہ ہے کسی ایک مخصوص فرقہ یا طبقہ کی وکالت نہیں کی۔انہوں نے کہا کہ صوفی کانفرنس میں شرکت اور سعودی عرب کا دورہ مسلمانوں میں پھوٹ نہیں ڈالے گا بلکہ انہیں متحد کرے گا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Najma dismisses charge of pm endorsing a section of muslims in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply