مظفر پور شیلٹر ہوم اسکینڈل:ایف آر درج کرانے والا تحفظ اطفال مرکز کا اسسٹنٹ ڈائریکٹر بھی شامل

پٹنہ: حکومت بہار نے مظفر پور ضلع میں ایک شیلٹر ہوم میں44کمسن بچیوں سے جنسی زیادتی کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کرنے کے لئے حزب اختلاف کے مطالبہ کی روشنی میں تحفظ اطفال مرکز کے6 ا سسٹنٹ ڈائریکٹروں کو معطل کر دیا۔

جن افسروں کو معطل کیا گیا ہے وہ مظفر پور، مونگیر،ارریہ،مدھوبنی ،بھاگلپور اور بھوج پور اضلاع کے ہیں۔ ان کو ریاست کے سماجی بہبود محکمہ نے ان وجوہ پر معطل کیا ہے کہ انہوں نے بچہ گھروں میں بچیوں کے ساتھ بدسلوکی کے حوالے سے مطلع کر دیے جانے کے باوجود کوئی کارروائی نہیں کی۔

واضح ہو کہ یہ کیس ، جس کی سی بی آئی کو تحقیقات سونپ دی گئی ہے، اس وقت روشنی میں آیا جب بہار سوشل ویلفئیر ڈپارٹمنٹ نے ٹاٹا انسٹی ٹیوٹ آف سوشل سائنسز کے ذریعہ شیلٹر ہوم کی سوشل آڈٹ کی بنیاد پر ایف آئی آر درج کرائی۔

معطل کیے گئے افسروں میں مرکز برائے تحفظ اطفال کا وہ اسسٹنٹ ڈائریکٹر بھی شامل ہے جس نے31مئی کو مظفرپور میں ویمن تھانہ میں ایف آئی درج کرائی تھی۔لیکن اصل ملزم اور شیلٹر ہومز کا مالک برجیش ٹھاکر،جس کے خلاف شیلٹر ہوم کی متاثرہ لڑکیوں نے شکایت کی تھی ، ابھی تک آزاد گھوم رہا ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Muzaffarpur shelter home rape case assistant director of social welfare department suspended in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply