موسیقی معاشرے کو جوڑنے کا کام کرتی ہے: وزیر اعظم مودی

نئی دہلی:وزیر اعظم نریندر مودی نے ہندوستانی موسیقی کو ملک اور معاشرے کو جوڑنے والا بتاتے ہوئے اس قیمتی ثقافتی ورثے کو نوجوان نسل کے درمیان بچائے رکھنے کا اعلان کیا ہے۔ وزیراعظم نریندر مودی نے ”اسپک میکے“ کے قیام کی 40 ویں سالگرہ پر جاری پانچویں انٹرنیشنل کنونشن کے موقع پر مبارک دیتے ہوئے کہا کہ اس ادارے نے کلاسیکی موسیقی، آرٹ، ادب، لوک ثقافت کے ذریعے ہندستانی ورثے کو بچانے میں بہت اہم کردار ادا کیا ہے۔ ملک کے لاکھوں نوجوانوں کو ملک کی ثقافت کے تئیں بیدار اور راغب کیا ہے۔ مسٹر مودی نے اس موقع پر منعقد بین الاقوامی ثقافتی تقریب کا افتتاح کرتے ہوئے یہ بات کہی. انہوں نے ایک ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے آئی آئی ٹی دہلی کے طالب علموں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستانی موسیقی، چاہے وہ لوک گیت موسیقی ہو، کلاسیکی موسیقی ہو یا پھر فلمی موسیقی ہی کیوں نہ ہو۔ اس نے ہمیشہ ملک اور معاشرے کو جوڑنے کا کام کیا ہے. انہوں نے کہا کہ موسیقی نے مذہب،عقیدہ،ذات برادری کی سماجی دیواروں کو توڑ کر سب کو ایک آواز میں، متحد ہوکر ایک ساتھ رہنے کا پیغام دیا ہے.۔
ہمارے ملک کی مٹی سے نکلی موسیقی، یہاں کی فطرت سے پیدا ہوئی موسیقی صرف سننے کا لطف نہیں دیتی، بلکہ دل اور دماغ تک پہنچ جاتی ہے۔ ہندوستانی موسیقی کے اثرات شخص کی سوچ پر، اس کے دل پر اور اس کی ذہنیت پر بھی مرتب ہوتے ہے۔ وزیراعظم نے مزید کہا کہ ہم اپنی وراثت کے تئیں لاپرواہ بن کر نہیں رہ سکتے۔ ہماری ثقافت، ہمارے آرٹ، ہماری موسیقی، ہمارا ادب، ہماری مختلف زبانیں، ہماری فطرت، ہمارے انمول ورثے ہیں۔ کوئی بھی ملک اپنی وراثت کو بھلا کر آگے نہیں بڑھ سکا ہے۔ ہم سب کی ذمہ داری ہے کہ ہم اس وراثت کو سنبھالیں اور اس کو اور مضبوط کریں۔ آپ سب’ ایک بھارت سریشٹھ بھارت‘ مہم کو بھی مضبوط کرنے میں اہم کردار ادا کر سکتے ہیں۔ ایک بھارت سریشٹھ بھارت مہم ملک کے ثقافتی تنوع کو مضبوط کرنے، ملک کے شہریوں کو اپنے ملک کی سرزمین پر موجود مختلف روایات، زبانوں، کھانے پینے کے طریقے، رہن سہن سے واقف کرانے کی کوشش ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Music breaks barriers forges bonds in society pm modi in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News
Tags: ,

Leave a Reply