پانچ سو اور ہزا ر کے نوٹ بند کیے جانے پر ملے جلے رد عمل کا اظہار

نئی دہلی:ملک میں 500 اور 1000 روپے کے نوٹوں کو بند کرنے کے وزیراعظم نریندرمودی کے اعلان پر ملا جلا ردعمل ظاہر کیا جا رہا ہے۔ مختلف مرکزی وزرا اور ریاستوں کے وزرا اعلی نے کالے دھن اور دہشت گردی سے نمٹنے کے لئے اٹھایا گیا جرات مندانہ قدم بتایا ہے مگر کئی لیڈروں نے اس کے طریقہ کار پر سوال اٹھائے ہیں۔ ترنمول کانگریس نے اسے نہایت سخت قدم بتایا ہے۔ کانگریس پارٹی نے اپنا ردعمل ظاہر کرنے میں احتیاط سے کام لیا ہے اور یہ سوال اٹھایا ہے کہ ایک ہزار کی جگہ دو ہزار کا نوٹ کیوں نکالاگیا ہے۔ تاہم نوٹ بند کرنے کے اچانک فیصلہ پر اعتراض کیا ہے۔ پارٹی نے تشویش ظاہر کی ہے کہ یہ کاروباریوں ، چھوٹے بیوپاریوں اور خواتین خانہ کے لئے بہت مسائل پیدا کرے گا۔
کانگریس کے مطابق پارٹی ہمیشہ کالے دھن کے معاملہ پر بامعنی واضح اور کارگر اقدام کی حمایت کرے گی لیکن یہ بھی کہا کہ کہیں مسٹر مودی نے غیر ممالک میں جمع 80 لاکھ کروڑ روپے کا کالا دھن واپس لانے میں اپنی ناکامی کو چھپانے کے لئے ہی تو یہ فیصلہ نہیں کیا۔ کانگریس نے بڑے نوٹ فی الفور بند کرنے کو عام لوگوں کے لئے مصیبت قرار دیتے ہوئے کہا کہ پیشگی اطلاع دیے بغیر نیا نظام نافذ کرنے کے وزیر اعظم کے اعلان نے عام آدمی کو ایسے بحران میں دوچار کردیا ہے جس کا حل حکومت کے پاس بھی نہیں ہے۔
کانگریس نے کہا کہ تیوہار کے موسم اور شادی بیاہ کے دن چل رہے ہیں۔حکومت نے اچانک 500 اور 1000 کے نوٹ کو بند کرنے کااعلان کر کے تہوار منانے والوں اور اپنے بچوں کی شادی کی تیاریوں میں مصروف لوگوں پر ایسا بوجھ لاد دیا گیا ہے جو جو انہیں مارے ڈال رہا ہے۔ کیونکہ بینکوں سے اب چند ہزار روپے ہی نکالے جا سکیں گے۔واضح رہے کہ وزیر اعظم کے اعلان کے مطابق9ور 10 نومبر کو ملک بھر کے اے ٹی ایم بند رہیں گے۔ جبکہ9 نومبر کو ملک کے تمام بینک بند رہیں گے۔
۔11 نومبر تک اسپتال ، ریلوے اسٹیشن ، ایئرپورٹ اور بس اسٹینڈ پر نوٹ چلتا رہے گا۔30 دسمبر تک بینک اور پوسٹ آفس میں نوٹ تبدیل کرائے جا سکتے ہیں ۔ایک دن میں صرف 10 ہزار تک کے نوٹ بدلے جا سکتے ہیں۔31 مارچ 2017 تک ریزرو بینک میں نوٹ بدلے جا سکتے ہیں۔اے ٹی ایم سے پیسہ نکالنے کے نئے ضابطے کے تحت کچھ دنوں تک ایک دن میں صرف 2000 روپے نکالے جاسکتے ہیں۔بعد میں ایک دن میں 4000 روپے تک نکال سکتے ہیں۔بینک سے بھی صرف دس ہزار روپے تبدیل کرائے جاسکیں گے۔ریزرو بینک نے اعلان کیا ہے کہ 10 نومبر سے مارکیٹ میں 500 اور 2 ہزار کے نئے نوٹ دستیاب رہیں گے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Mixed reaction on 500 and 1000 rs denominations cancellation in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply