بیف کی قلت سے ریاست کی سیاحت متاثر ہوئی ہے: گوا اسمبلی کا ڈپٹی اسپیکر

پنجی: گوا اسمبلی کے ڈپٹی اسپیکر اور بی جے پی رکن اسمبلی مائیکل لوبو نے گﺅ رکشکوں کے خلاف کارروائی کرنے میں ناکامی اور سلاٹر ہاؤسز کے بند ہوجانے پر اپنی ہی پارٹی کی قیادت والی حکومت کو زبردست ہدف تنقید بنایا۔

انہوں نے کہا کہ گﺅ رکشکوں کی ہلڑ بازی اور گایوں کے کاروبار میں ان کے ذریعہ رکاوٹیں ڈالنے اور ہجومی تشدد برپا کرنے کے باعث گوا کی گوشت خور( بیف ) آبادی گوشت سے محروم ہو گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کچھ نام نہاد گﺅ رکشک گوا کی سرحد پر تعینات ہیں اور وہ ریاست میں گایوں کو داخلہ روک رہے ہیں۔لوبو نے اسمبلی میں کہا کہ وہ سمجھتے ہیں کہ اس معاملہ میں حکومت ناکام ہو گئی ہے۔

انہون نے یہ بھی کہا کہ بیف کی قلت کے باعث سیاحت کا شعبہ بھی بری طرح متاثر ہوا ہے۔سیاح جو صرف بیف کھانے آتے ہیں انہیں گائے کا گوشت نہیں ملتا یہی نہیں بلکہ ہمارے تہواروں پو بھی بیف کی شدید قلت رہتی ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Michael lobo questions government on abattoirs closure in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply