کانگریس ۔سماج وادی اتحاد کا مشترکہ پروگرام ایک فریب : مایاوتی

لکھنؤ: بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) صدر مایاوتی نے کہا کہ پہلے مرحلے کی پولنگ کے دن سماج وادی پارٹی (ایس پی)۔کانگریس نے’مشترکہ پروگرام‘کا اعلان کرکے اترپردیش کی تقریبا 22 کروڑ عوام کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کی کوشش کی ہے۔ محترمہ مایاوتی نے آج یہاں جاری بیان میں کہا کہ پانچ برسوں تک پورے سماج کو نظر انداز کرتے ہوئے صرف “ایک کنبہ، ایک خاص علاقے ‘میں ہی الجھے رہنے والی ریاست کی موجودہ ایس پی حکومت کے سربراہ کی دوغلی چال، کردار اورچہرے کو ریاست کی عوام اچھی طرح سمجھ چکے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ دونوں پارٹیوں کے الگ الگ منشور جاری کرنے کے باوجود د پھر سے ایس پی اور کانگریس نے’مشترکہ پروگرام‘کا اعلان کرکے ریاست عوام کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کی کوشش کی ہے۔ ان میں سے بیشتر اعلانات میں بی ایس پی حکومت کی نقل کی گئی ہے۔ محترمہ مایاوتی نے کہا کہ’مہامایا غریب اقتصادی مدد یوجنا‘و ساوتری بائی پھولے لڑکیوں کی تعلیم کی مدد یوجنا جس کے تحت طالبات کو 15 ہزار روپے کی مدد اور اسکول جانے کے لئے سائیکل کا انتظام کیاگیا تھا۔ 11 ویں پاس کرنے پر انہیں دس ہزار روپے اضافی دینے کی یوجنا کو 2009۔10 میں ہی نافذ کرکے لڑکیوں کو ہر سال فائدہ پہنچانا شروع کر دیا گیا تھا۔
ساتھ ہی ایک لاکھ 10 ہزار گاوں میں صفائی ملازمین کے سرکاری عہدے کو منظور ی فراہم کرکے ان پر بحالی کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری شعبوں میں لگی بھرتی پر سے روک کو ہٹا کر پورے سماج کے نوجوانوں اور بے روزگاروں کو مستقل ملازمت دی گئی۔غیر منظم شعبے میں بھی روزگار کے نئے مواقع پیدا کرکے نقل مکانی کو پوری طرح سے روکا گیا تھا۔ وظائف کو بڑھا کر ان سے فائدہ اٹھانے والوں کے اکاونٹوں میں راست طورپردینے کا نظام نافذ کرکے بدعنوانی کو روکنے کا کام کیا گیا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Mayawatis campaign turns a new leaf in uttar pradesh in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply