منی پور میں اقتصادی ناکہ بندی 73ویں دن میں داخل ،اشیائے ضروریہ کی شدید قلت

امپھال: منی پور میں یونائیٹڈ ناگا کونسل (یواین سی) کی جانب سے 73 دن سے جاری اقتصادی ناکہ بندی کی وجہ سے یہاں کھانے کی اشیاء کی شدید قلت ہو گئیہے۔ ناکہ بندی کی وجہ سے لوگوں کو کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ یہاں طویل عرصے سے پیٹرولیم، رسوئی گیس اور ادویات کی فراہمی نہیں ہو پا رہی ہے۔ ناکہ بندی کی وجہ سے پہاڑی اور دیہی علاقوں میں ناگا اور کوکی قبائلی اکثریتی علاقے سب سے زیادہ متاثر ہیں۔ یواین سی نے الیکشن کمیشن کی جانب سے منی پور میں اسمبلی انتخابات کے اعلان کے باوجود ناکہ بندی جاری رکھنے کا اعلان کیا ہے۔
اس سے پہلے ریاست کے وزیر اعلی اوبرام ابو بی سنگھ نے کہا تھا کہ حکومت یواین سی کے ساتھ مذاکرات کے لیے تیار ہے اور اس سے ناکہ بندی ختم کرنے کے لیے بھی کہا گیا ہے۔ ریاستی حکومت اور سول سوسائٹی نے ناکہ بندی کے لیے مرکز اور نیشنلسٹ سوشلسٹ کونسل آف ناگالینڈ (اساک-موﺅا) کو ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔ اس درمیان اے ایس سی این (آئی ایم) کے ساتھ امن مذاکرات کے مذاکرات کار آر این روی منی پور کے مختلف شہری تنظیموں سے 20 جنوری کو اقتصادی ناکہ بندی کے معاملے پر بات چیت کے لئے دہلی آنے کا اعلان کیا ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Manipur faces acute food shortage as unc blockade enters 73 days in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply