کیرل کے ایک مسلمان نے ایک تالاب اور قطعہ اراضی قدیم شیو مندر کو عطیہ کر دی

کوچین: کیرل کے شمال میں ملا پورم میں ایک مسلم شخص نے ریاست میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی کو فروغ دینے میں اپنا کردار ادا کرتے ہوئے پڑوس میں واقع صدیوںپرانے شیو مندر کو ایک تالاب اور اس سے متصل اراضی عطیہ کر دی۔
بتایا جاتا ہے کہ پورور پنچایت میں واقع کناڈا مہا شیو کشیترم کی مند رکمیٹی کے ارکان نے ملا پورم کے کالی کاؤ کے رہائشی نمیار تھوڈی علی نام کے مسلم شخص سے ملاقات کی اور اس سے مندر سے متصل ایک تالاب اور قریبی اراضی خریدنے کی بات کی۔
لیکن کمیٹی ارکان کی اس وقت حیرت کی انتہا نہ رہی جب علی نے اس املاک کے عوض کوئی پیسہ لینے سے انکار کر دیا اور اس کے بجائے ا نہوں نے بغیر کسی معاوضہ کے وہ املاک بشمول تالاب عطیہ کر دی۔ علی نے بتایا کہ مندر میں برسوں سے کوئی تالاب نہیں تھاجس کے باعث شردھالوؤں کو مندر میں داخل ہونے سے پہلے ہاتھ پیر دھونے میں کافی مشکلات پیش آتی تھیں۔
یہ مندروں کے لیے لازمی ہے کہ شردھالوؤں کے ڈبکی لگانے کے لیے اپنے احاطے میں تالاب بنائیں۔جس کے باعث کمیٹی والے ان کے پاس آئے تھے لیکن انہوںنے کوئی معاوضہ لیے بغیر اپنی املاک یہ کہہ کر مفت عطیہ کر دی کہ جو رقم وہ انہیں دینا چاہتے تھے اسے وہ مندر اور وہاں درشن کے لیے آنے والوں کو سہولتیں بہم پہنچانے کے لیے استعمال کریں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Malayali muslim gifts a pond to shiva temple in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply