لوک سبھا میں245قدیمی ومتروک قوانین منسوخ کرنے کے دو بل منظور

نئی دہلی: لوک سبھا نے ایسے 245 قوانین کی،جو متروک، فرسودہ اورغیر مروج ہیں،تنسیخ کے دو بلوں کو منظوری دے دی۔ اس میں باغیانہ اجلاس مخالف قانون مجریہ1911اور کلکتہ پائلٹس قانون مجریہ 1859بھی شامل ہیں۔
وزیر قانون روی شنکر پرساد نے کہا کہ قبل از آزادی کے قدیمی، فرسودہ اور کئی غیر مروجہ قوانین کو،جو بدقسمتی سے نوآبادیاتی دور کے ورثہ کا جزو ہیں ،منسوخ کرنا ایک ترقیاتی قدم ہے جس سے حکومت کی اصلاح حامی سوچ کی عکاسی ہوتی ہے۔
مسٹر شنکر منسوخی اور ترمیمی بل کے حوالے سے استفسار کیے جانے کے بعد اراکین لوک سبھا کو جواب دے رہے تھے۔پرساد نے کہاکہ 1029قوانین 1950میں ہی پارلیمنٹ منسوخ کر چکی ہے۔اور آخری بار س قسم کے متروک قوانین 2004میں اٹل بہاری باجپئی کے دوروزارت عظمیٰ میں منسوخ کیے گئے تھے۔

Title: ls passes 2 bills to repeal 245 archaic laws | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply