مسلمان سے شادی کرنے والی کیرل کی لڑکی کے والد کی عرضی پر فوری سماعت سے سپریم کورٹ کا انکار

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے مذہب اسلام قبول کر کے ایک مسلم لڑکے سے شادی کرنے والی کیرل کی ایک لڑکی کے والد کی اس عرضی پر ،کہ لڑکی سے جرح ان کیمرہ کی جائے ،فوری سماعت کرنے سے انکار کر دیا۔
چیف جسٹس دیپک مشرا ، جسٹس اے ایم کھانویلکر اور جسٹس ڈی وائی چندرا چوڑ پر مشتمل تین ججی بنچ نے کہا کہ وہ اس معاملہ کی سماعت 27نومبر کو ہی،جب لڑکی جرح کے لیے عدالت کے روبرو لائی جائے گی، کرے گی ۔
لڑکی کے الد کے وکیل اشوکن کے ایم نے یہ کہتے ہوئے فوری سماعت کی اپیل کی کہ اگر کھلی عدالت میں جرح کے فیصلہ کو تبدیل نہ کیا گیا تو یہ عرضی لاحاصل رہے گی۔
سپریم کورٹ نے 30اکتوبر کو حکم جاری کیا تھا کھلی عدالت میں جرح کے لیے اس لرکی کو 27نومبر کو عدالت میں پیش کیا جائے۔اشوکن نے معاملہ کی فرقہ وارانہ حساسیت کا حوالہ دیا اور کہا کہ چونکہ بنیاد پرست عناصر ان کے موکل کی بیٹی اور اس کے گھر والوں کے تحفظ اور نجی زندگی کی پوشیدگی کو داؤ پر لگا سکتے ہیں اس لیے سماعت ان کیمرہ کی جائے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Love jihad sc refuses urgent hearing for in camera proceedings in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply